کیا سوشل میڈیا پر لیک ہونے والی فحش ویڈیو فاطمہ سہیل کی ہے؟ خاتون خود میدان میں آگئیں، بڑا اعلان کردیا

کیا سوشل میڈیا پر لیک ہونے والی فحش ویڈیو فاطمہ سہیل کی ہے؟ خاتون خود میدان ...
کیا سوشل میڈیا پر لیک ہونے والی فحش ویڈیو فاطمہ سہیل کی ہے؟ خاتون خود میدان میں آگئیں، بڑا اعلان کردیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سوشل میڈیا پر کچھ روز پہلے ایک فحش ویڈیو لیک ہوئی ہے جس کے بارے میں دعویٰ کیا جارہا ہے کہ یہ محسن عباس حیدر کی سابقہ  اہلیہ فاطمہ سہیل کی ہے، سوشل میڈیا پر کچھ روز تک جاری رہنے والے ہنگامے کے بعد فاطمہ سہیل خود میدان میں آئی ہیں اور انہوں نے واضح کیا ہے کہ ان کا اس ویڈیو سے کوئی لینا دینا نہیں ہے، انہوں نے اس ویڈیو کے سلسلے میں ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کو درخواست بھی جمع کرادی ہے۔

اپنے ایک پیغام میں فاطمہ سہیل نے لکھا کہ حال ہی میں ایک نامناسب ویڈیو میں غلط طریقے سے میرا نام استعمال کیا گیا، میرا اس ویڈیو سے کچھ لینا دینا نہیں ہے ، حیران کن طور پر اس ویڈیو میں موجود خاتون مجھ سے مشابہت بھی نہیں رکھتی۔

فاطمہ سہیل نے کہا کہ انہوں نے اس ویڈیو پر ایکشن لے لیا ہے اور ایف آئی اے میں شکایت درج کرادی ہے، ایف آئی اے کی فرانزک رپورٹ کے مطابق یہ کسی اور خاتون کی ویڈیو ہے۔’ہم اس معاملے کی تحقیقات کر رہے ہیں اور بہت جلد اس شخص کو سامنے لے کر آئیں گے جس نے میری ساکھ کو مجروح کرنے کا سوچا سمجھا منصوبہ بنایا۔‘

فاطمہ سہیل نے مزید لکھا کہ ’جن لوگوں نے غلط طریقے سے میرا نام اور میری تصاویر کسی اور کی فحش فلم پر جوڑی ہیں انہیں اس کی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔‘

فاطمہ سہیل نے کہا کہ انہیں یہ سوچتے ہوئے بھی گھن آتی ہے کہ کچھ لوگ کس حد تک گر سکتے ہیں، ایسے لوگوں کو سبق سکھایا جانا چاہیے تاکہ یہ دوبارہ کسی پر غلط الزام لگانے سے پہلے 100 بار سوچیں۔

مزید : تفریح /علاقائی /پنجاب /لاہور