انسانیت کے ناطے پریانتھا کی جان بچانے کی کوشش کی،ملک عدنان

    انسانیت کے ناطے پریانتھا کی جان بچانے کی کوشش کی،ملک عدنان

  

سیالکوٹ (مانیٹرنگ ڈیسک) سری لنکن منیجر کی جان بچانے کیلئے خود کو ڈھال بنا کر مار کھانے والے ملک عدنان کا کہنا ہے انہوں نے ملک کی بدنامی کے خوف اور انسانیت کے نا طے پریانتھا کمارا کی جان بچانے کی کوشش کی اور ہجوم کا تشدد برداشت کیا، وہ تمغہ شجاعت کے اعلان پر وزیر اعظم کے شکر گزار ہیں۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ملک عدنان نے کہا انہوں نے انسانیت کے ناطے پریانتھا کی جان بچانے کی کوشش کی، کوشش تھی اس واقعے سے ملک کا نام خراب نہ ہو اسلئے اپنی جان داؤ پر لگادی، ملک کی خاطر جان قربان کر نے کیلئے تیار ہیں، وہ تمغہ شجاعت کے اعلان پر وزیر اعظم کا شکر گزار ہیں، وہ میٹنگ میں تھے جب انہیں جھگڑے کی اطلاع ملی، جب تشدد ہو رہا تھا تو وہ پریانتھا کے اوپر لیٹ گئے جس کے بعد ہجوم نے ان پر بھی تشدد کیا، افسوس ہے اس کی جان نہیں بچا سکا۔ملک عدنان کے مطابق پریانتھا کمپنی کے قوانین کو فالو کرتے تھے، فیکٹری میں اکثر پوسٹر لگے ہوتے ہیں جنہیں صفائی کے دوران اتارا جاتا ہے، پریانتھا اردو پڑھنا نہیں جانتا تھا، اسلئے مسئلہ ہوا، پریانتھا پر حملے کیلئے دوسری فیکٹری اور علاقے سے لوگ ہماری فیکٹری کے دروازے توڑ کر اندر آئے، انہیں سمجھانے کی کوشش کی لیکن کامیابی نہیں ہوسکی۔

ملک عدنان

مزید :

صفحہ اول -