133NAمسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی دونوں کامیاب، ایک نے سیٹ حاصل کر لی، دوسری کے ووٹرز میں بڑا اضافہ 

      133NAمسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی دونوں کامیاب، ایک نے سیٹ حاصل کر لی، ...

  

 لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) این اے 133کے ضمنی الیکشن کی غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان مسلم لیگ(ن) کی شائستہ پرویز ملک کامیاب ہو گئیں جبکہ پاکستان پیپلزپارٹی کے اسلم گل دوسرے نمبر پر رہے۔لاہور کے حلقہ این اے 133 کے ضمنی انتخاب کے بڑے معرکے میں پاکستان پیپلز پارٹی کے اسلم گل اور ن لیگ کی شائستہ پرویز ملک کے درمیان کڑا مقابلہ دیکھنے کو ملا جبکہ 9امیدوار و ں کی ضمانتیں ضبط ہوگئیں۔پاکستان مسلم لیگ(ن) کی شائستہ پرویز ملک نے ساڑھے 14ہزار ووٹوں سے کامیابی اپنے نام کی،انہوں  نے 46ہزار 811ووٹ حاصل کئے جبکہ پاکستان پیپلز  پارٹی کے اسلم گل 32ہزار 313ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔فارم47 کے مطابق 254پولنگ سٹینشنز کے نتائج مکمل ہوگئے،حلقے میں 440485 ووٹ میں سے 80997ووٹ کاسٹ ہوئے، ووٹوں کا ٹرن آو ٹ 18.59 فیصد رہا،50936مرد اور30959 خواتین نے ووٹ کاسٹ کیا جبکہ خارج ہونے والے ووٹوں کی تعداد 898 رہی۔این اے 133 پرویز ملک کے انتقال کے باعث خالی ہوئی تھی، 2018 کے الیکشن میں نواز لیگ کے پرویز ملک 89 ہزار 699 ووٹ لے کر جیتے تھے، پیپلزپارٹی کے اسلم گل نے5 ہزار 585 ووٹ لئے تھے،اس طرح اسلم گل نے اپنے ووٹوں میں بڑا اضافہ کیا۔ مسلم لیگ ن نے اگرچہ لا ہو ر کی یہ سیٹ آسانی سے جیت لی تاہم پیپلز پارٹی بھی پنجاب اور خاص طور پر لاہورمیں اپنے ووٹ بینک میں بڑا اضافہ کرنے میں کامیا ب رہی۔2018 ء کے عام انتخابات میں این اے 133سے شائستہ پرویز کے خاوند پرویز ملک کامیاب ہوئے تھے جنہوں 89678 ووٹ لئے تھے جبکہ اس وقت اس حلقے سے تحریک انصاف کے امیدوار اعجاز چودھری نے77231 ووٹ لئے تھے۔پیپلز پارٹی کے اسلم گل نے 2018ء میں اس حلقے سے5585ووٹ لئے تھے، اس طرح پیپلز پارٹی اگرچہ این اے 131کی سیٹ جیت نہیں سکی مگر لاہور میں کم بیک کرنے میں کامیاب رہی۔ اس حلقے میں تحریک انصاف کے جمشید چیمہ اور ان کی اہلیہ کے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد حلقے میں پی ٹی آئی کا کوئی امیدوار میدان میں نہیں تھا، جس کا پیپلز پارٹی نے بھرپور فائدہ اٹھایا۔۔قبل ازیں پولنگ کا آغاز صبح 8 بجے ہوا جو شا م 5بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہا،ضمنی الیکشن میں مجموعی طور پر 11امیدوار میدان میں رہے، پی ٹی آئی امیدوارجمشید چیمہ کے کاغذات نامزدگی مستردہوگئے تھے، نشست ن لیگ کے پرویز ملک کی وفا ت کے باعث خالی ہوئی۔حلقے میں 254 پولنگ سٹیشنز قائم کئے گئے جن میں سے 34 حساس اور 21 کو حساس ترین قرار دیا گیا تھا۔ ووٹرز کی تعدا د4 لاکھ 40 ہزار 485 ہے جن میں سے مرد ووٹرز کی تعداد 2لاکھ 33ہزار 558 جبکہ خواتین ووٹرزکی تعداد 2 لاکھ 6ہزار927 ہے۔ این اے 133 میں 2 ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات کئے گئے۔این اے ایک سو تینتیس میں ضمنی انتخاب میں ٹرن آؤٹ کم رہا، جیالے اور متوالے پریشان دکھائی دیئے جبکہ شہبازشریف، مریم نواز اور حمزہ شہباز کے رہنماؤں سے رابطے اورصورتحال کی لمحہ بہ لمحہ مانیٹرنگ کی،آصف زرداری اور بلاول بھٹو بھی رپورٹس لیتے رہے،شائستہ پرویز ملک کی کامیابی پر مسلم لیگ ن کے کارکنوں نے بھنگڑے ڈالے  اور قیادے حق مین نعرے لگائے مٹھائیان تقسیم کی گئیں جبکہ شکست کے باوجود ووٹرز مین بھاری اجافے پر پیپلز پاری کی قادت بھی ایک دو سرے کو مبارکبادیں دیتی رہی۔

ضمنی الیکشن

مزید :

صفحہ اول -