انڈو نیشیا، ماؤنٹ سیمیرومیں آتش فشاں پھٹنے سے 15افراد ہلاک، 100زخمی 

  انڈو نیشیا، ماؤنٹ سیمیرومیں آتش فشاں پھٹنے سے 15افراد ہلاک، 100زخمی 

  

      جکارتہ (نیوز ایجنسیاں) انڈونیشیا کے ماؤنٹ سیمیرو میں آتش فشاں پھٹنے سے 15 افراد ہلاک اور 100زخمی ہو گئے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق آتش فشاں پھٹنے سے علاقے میں راکھ اور دھویں سے اندھیرا چھا گیا جبکہ ہزاروں افراد کو ریلیف کیمپوں میں منتقل کر دیا گیا۔ ماؤنٹ سیمیرو کے 130 فعال آتش فشاں پہاڑوں میں سے ایک ہے۔انڈونیشیا کی نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسی (بی این پی بی) کے سربراہ کا کہنا ہے کہ انہوں نے فوج سے مدد طلب کر لی ہے۔انڈونیشیا میں آتش فشاں پہاڑ ماونٹ سیمیرو کے پھٹنے کی وجہ سے ہزاروں افراد نقل مکانی پر مجبور ہو گئے ہیں۔فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق آتش فشاں پہاڑ کے پھٹنے کے بعد دھویں اور راکھ نے قریبی علاقوں کو ڈھک لیا۔امدادی کارکن مقامی باشندوں کو نکالنے کیلئے پہنچے کیونکہ لاوا قریبی دیہات تک پہنچ گیا ہے اور مشرقی جاوا میں لوماجنگ ریجنسی میں ایک پل کو تباہ کر دیا۔دریں اثناء انڈونیشیا کے شما لی صوبے سولاوسی میں اتوار کے روز 6.2 شدت کا زلزلہ آیا تاہم کسی جانی و مالی نقصان کی اطلاع نہیں ملی-میٹرو لو جی، مو سمیات اور جیو فزکس ایجنسی کے زلزلے اور سونامی کے تخفیف ڈویژن کے سربراہ در یا نو نے بتایا کہ زلزلے کے بعد سونامی کی وارننگ جاری نہیں کی گئی۔عہد یدار نے کہا کہ زلزلے کے جھٹکے مقامی وقت کے مطابق صبح 6 بجکر 47 منٹ پا کستانی وقت کے مطا بق  اتوار کی صبح 4 بج کر 47منٹ پرمحسوس کئے گئے جس کا مرکز147 کلومیٹر جنوب مشرق میں میلونگیونے ٹان تھا جبکہ گہرائی 157 کلومیٹر سمندر میں تھی۔زلزلے کے جھٹکے شمالی مالوکو صوبے کے موروٹائی جز ائر میں بھی محسوس کئے گئے جس کی ایم ایم آئی (ترمیم شدہ مرکالی کی شدت) تیسرے در جے پر محسوس کی گئی،شمالی مالوکو صوبے کے ایمرجنسی یونٹ کے سربراہ یوسری عبدالکریم کے مطابق سب سے زیادہ متاثرہ علاقے میں موروٹائی جزائر سے جانی اور مالی نقصان کی کو ئی اطلاع نہیں ملی۔

آتش فشاں 

مزید :

صفحہ آخر -