شانگلہ‘معذورافرادکا محکمہ تعلیم میں کوٹہ مختص نہ کرنے پر احتجاج

شانگلہ‘معذورافرادکا محکمہ تعلیم میں کوٹہ مختص نہ کرنے پر احتجاج

  

 الپوری (ڈسٹرکٹ رپورٹر) شانگلہ‘معذورافرادکا محکمہ تعلیم میں کوٹہ مختص نہ کرنے،احساس پروگرام،زکواۃ اور سوشل ویلفیئر سمیت دیگر اداروں میں نظرانداز کرنے کیخلاف سراپااحتجاج بن گئے،معذوروں کو حقوق اور جائز ملازمت کوٹہ فراہم کرنے کیلئے شانگلہ پریس کلب الپوری کی سامنے احتجاج۔ حکومت فل الفور معذوروں کی جائز مطالبات پوری کریں،محکمہ تعلیم اشتہار میں معذور کوٹہ شامل نہ کرنے کیخلاف عدالت جانے کا اعلان۔ ان خیالات کا اظہار صلاح الدین شلمانو،محمد اسلام مناگو،عطااللہ ماچاڑ،ضیاء الرحمن باسی،صفی اللہ گنداؤ،خان نبی اولند و دیگر خصوصی افراد نے گزشتہ روز شانگلہ پریس کلب الپوری کے سامنے احتجاج کرتے ہوئے کہی۔ انھوں نے اعلان کیا کہ ان کے مطالبات پورے نہ کئے گئے تو ضلع بھرسے خصوصی افراد کو جمع کرکے الپوری چوک میں دھرنا دیا جائے گا۔ بیشترکوالیفائیڈ معذور ملازمتوں میں کوٹہ نہ ملنے پر حکومت پر برس پڑے۔ ہمیں بھیک مانگنے پر مجبور نہ کیا جائے،سرکاری محکموں کا ہمارے ساتھ رویہ قابل افسوس ہے۔ ہمیں صرف شناختی کارڈ میں خصوصی افراد لکھا جاتا ہیں جبکہ حقیقت برعکس ہے۔ محکمہ تعلیم شانگلہ میں مختلف کیڈر کے اسامیوں کے اشتہار میں معذور کوٹہ نہیں دیا گیا اور محکمہ تعلیم کا موقف ہے کہ معذور کوٹہ پہلے سے پُر کرچکے ہیں،اشتہار سے پہلے معذور کوٹہ پُر کرنا سمجھ سے بالاتر ہے۔ حکومت،وزراء، منتخب نمائندے اور سرکاری سطح پر معذور کیلئے صرف عالمی دن منایا جاتا ہے جبکہ ان کیلئے اور کوئی اقدامات نہ ہونے کے برابر ہیں۔ احساس پروگرام میں بیشتر معذوروں کے پیسے کاٹ دئے ہیں جسکی وجہ سے ان کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ سوشل ویلفیئر صرف برائے نام اسکی رجسٹریشن کرچکے ہیں مگر انھیں اس ادرے سے کوئی فائدہ نہیں،سوشل ویلفیئر شانگلہ معذوروں کی فلاح و بہبود یا انھیں سہولیات کی فراہمی کیلئے اب تک کچھ بھی نہ کرسکی۔ محکمہ زکواۃ اور دیگر فلاحی اداریں معذوروں کو انتہائی بری نظر سے دیکھتے ہیں۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -