موجود ہ حالات میں افغانستان کو اکیلا چھوڑنا تاریخی غلطی ہو گی: چودھری سرور

موجود ہ حالات میں افغانستان کو اکیلا چھوڑنا تاریخی غلطی ہو گی: چودھری سرور

  

         لاہور(نمائندہ خصوصی)گور نر پنجاب چوہدری محمدسرورنے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں افغانستان کو اکیلا چھوڑنا ایک تاریخی غلطی ہوگی جسکے خوفناک نتائج نکلیں گے 'اگر افغانستان کے اہم معاملے پر توجہ نہ دی گئی تو وہاں انسانی بحران جنم لے سکتا ہے جیسے قابو کر نا پھر کسی کے کنٹرول میں نہیں رہے گا 'بر طانیہ سمیت پوری دنیا کو افغان عوام کی غیر مشروط امداد کر نا ہوگی 'مضبوط اور مستحکم افغانستان صرف پاکستان اور خطے ہی نہیں پوری دنیا کے مفاد میں ہے۔  گور نر ہاؤس لاہور سے جاری اعلامیہ کے مطابق گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے دورہ بر طانیہ کے دوران بر طانوی (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

وزیر زیک گولڈ سمتھ سے لندن میں ملاقات کی جس میں پاکستان اور بر طانیہ کے تعلقات 'افغانستان اور خطے کی موجودہ صورتحال سمیت دیگر ایشوز کے بارے میں بات چیت کی گئی اور گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے بر طانوی وزیر کو افغانستان میں عوام کو معاشی سمیت دیگر مسائل اور پاکستان کی جانب سے افغان امن کے لیے کیے جانیوالے اقدامات کے بارے میں بھی بتایا۔گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا کہ افغانستان کے یک نکاتی ایجنڈے پر او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کا اجلاس پاکستان میں ہونا خوش آئند ہے کیونکہ اس وقت امت مسلمہ سمیت پوری دنیا کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ افغانستان کے معاملے کو نظر انداز کر نے کی پالیسی اختیار کر نے کی بجائے وہاں عوام کو کھانے پینے سمیت دیگر بنیادی سہولتوں کی فراہمی اور انسانیت کے تحفظ کے لیے اپنا کردار ادا کر یں اور دنیا کو یہ بات سمجھ لینا چاہیے کہ اگر افغانستان کے اس اہم معاملہ پر توجہ نہ دی گئی تو وہاں انسانی بحران جنم لے سکتا ہے، اسی طرح اگر وہاں بروقت خوراک کا بندوبست نہ ہوا اور وسائل منجمد ہونے سے معاشی بحران کا بھی خدشہ ہو سکتا ہے۔چوہدری محمدسرور نے کہا کہ افغان قیادت کے پاس مالی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے وہاں خوراک کی کمی جیسے مسائل میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اگر وہاں بر وقت اقدامات نہ ہوئے تو 22.8  ملین افغان غذائی قلت سے متاثر ہو سکتے ہیں موجودہ حالات میں افغانستان کو اکیلا چھوڑنا ایک تاریخی غلطی ہوگی اس لیے ضرورت اس بات کی ہے کہ دنیا کل نہیں آج ہی افغانستان کی موجودہ صورتحال کا نوٹس لے اور وہاں عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے لیے افغان قیادت کی بھر پور مدد کی جائے تاکہ کسی بڑے بحران سے بھی بچا جا سکے۔ ملاقات کے دوران گفتگو میں بر طانوی وزیر زیک گولڈ سمتھ نے افغانستان میں بنیادی سہولتوں اور انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے اقدامات یقینی بنانے سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں انسانیت کا تحفظ سب کی ذمہ داری ہے اور اسکے لیے بر طانوی حکومت بھی یقینی طور پر اپنا کردار اد ا کر یگی۔

گورنر پنجاب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -