"مجھے 50 ہزار ووٹوں کی امید تھی" این اے 133 کے نتائج پر آصف زرداری بھی بول پڑے

"مجھے 50 ہزار ووٹوں کی امید تھی" این اے 133 کے نتائج پر آصف زرداری بھی بول پڑے

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ  ن لیگ نے نہ صرف لاہور بلکہ پنجاب بھر میں اپنی پسند کی حلقہ بندیاں کی ہیں۔یہ میری دھرتی اور میرے ملک کے خلاف ہیں۔ جو لوگ اپنی دھرتی پر نہیں مرنا چاہتے وہ اس دھرتی کے خلاف ہیں۔کل کے الیکشن میں 50 ہزار ووٹوں کی امید تھی، اگر ٹرن آؤٹ بڑھا لیتے تو اتنے ووٹ مل سکتے تھے۔

این اے 133 کے ضمنی انتخاب  کے بعد لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ ن لیگ نے برادری اور اپنی پسند سے حلقہ بندیاں قائم کی ہیں،ہم حلقہ بندیاں تبدیل کریں گے.ہم ہر گلی محلے میں ان سے لڑیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں الیکشن مشکل نہیں ہماری کمزوریاں سامنے آتی ہیں۔پیپلزپارٹی نے این اے 133 میں اچھا رزلٹ دیا۔مجھے 50ہزار ووٹوں کی امید تھی۔اگر ٹرن آؤٹ بڑھا لیتے تو 50 ہزار ووٹ لے سکتے تھے۔ہم کامیابی کی طرف جارہے تھے کہ آر او الیکشن کرواکر ہم سے انتخاب چھینے گئے۔پورے پاکستان میں ایسی کوئی جگہ نہیں جہاں بھٹو صاحب لوگوں کے دلوں میں بستے نہ ہوں،میں نے پیپلزپارٹی کے مشکل وقت میں جیل کاٹی۔

سابق صدر کا کہنا تھا کہ اس وقت پاکستان بہت بڑے خطرے میں ہے،دنیا پاکستان کو توڑنا چاہتی تھی مگر ہم پاکستان کو بچائیں گے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز لاہور کے حلقہ این اے 133 میں ہونے والے ضمنی الیکشن میں مسلم لیگ ن کی امیدوار شائستہ پرویز ملک نے 46 ہزار 811 ووٹوں کے ساتھ کامیابی حاصل کی تھی۔ اس حلقے میں پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار چوہدری اسلم گل نے 32 ہزار 313 ووٹ حاصل کیے اور دوسرے نمبر پر رہے۔ یہاں یہ بھی واضح رہے کہ عام انتخابات 2018 میں پیپلز پارٹی کو اس حلقے سے صرف ساڑھے پانچ  ہزار کے قریب ووٹ ہی ملے تھے۔

مزید :

قومی -Breaking News -اہم خبریں -