پانچ ماہ قبل شہری کو قتل کرنے والا پولیس اہلکار قانون کی گرفت سے باہر، اہلخانہ کا انویسٹی گیشن ٹیم پر جانبداری کا الزام

پانچ ماہ قبل شہری کو قتل کرنے والا پولیس اہلکار قانون کی گرفت سے باہر، ...
پانچ ماہ قبل شہری کو قتل کرنے والا پولیس اہلکار قانون کی گرفت سے باہر، اہلخانہ کا انویسٹی گیشن ٹیم پر جانبداری کا الزام

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) شاہدرہ کے علاقہ میں پانچ ماہ قبل 20 سالہ نوجوان کو فائرنگ کرکے قتل کرنے والے پولیس اہلکار اور اسکے ساتھیوں کو انویسٹی گیشن ٹیم اب تک گرفتار نہ کرسکی ہے۔

مقتول کے بھائی ذوہیب جمیل کے مطابق اس کے چھوٹے بھائی زین جمیل کو ملزمان پولیس اہلکار وسیم ،محب اور عاطف نے 13جون کو فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا اور ملزمان اب تک مفرور ہیں۔ ہم متعدد بار پولیس کچہریوں میں بھی جاچکے ہیں،یا تو افسران سے ہم کو ملنے ہی نہیں دیا جاتا یا پھر نوٹس لینے کے باوجود ملزمان کے خلا ف ایکشن نہیں لیا جاتا،پانچ ماہ سے زائد کا عرصہ گزرگیا ہے اور ملزمان اب تک قانون کی گرفت سے باہر ہیں۔پولیس اپنے پیٹی بھائی کو گرفتار ہی نہیں کرنا چاہتی۔ذہیب جمیل کا کہنا تھا کہ بچوں کی لڑائی پر اہلکار وسیم نے میرے بھائی کو دھمکیاں دیں اور پھر اسے فائرنگ کرکے قتل کردیا۔وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب راؤ سردار علی خان سے اپیل ہے کہ وہ واقعہ کا نوٹس لیکر ملزمان کو گرفتار کروائیں۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -پنجاب -لاہور -