وزیر اعظم سے مولانا فضل الرحمان کی ملاقات، اسمبلیوں کی تحلیل سمیت سیاسی و معاشی صورتحال پر گفتگو

وزیر اعظم سے مولانا فضل الرحمان کی ملاقات، اسمبلیوں کی تحلیل سمیت سیاسی و ...
وزیر اعظم سے مولانا فضل الرحمان کی ملاقات، اسمبلیوں کی تحلیل سمیت سیاسی و معاشی صورتحال پر گفتگو

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم شہباز شریف سے پی ڈی ایم کے صدر اور سربراہ جمعیت علمائے اسلام (ف) مولانا فضل الرحمان نے ملاقات کی ، ملاقات میں پی ٹی آئی و دیگر اتحادیوں کی جانب سے صوبائی اسمبلیوں کو توڑنے سمیت دیگر سیاسی و معاشی امور پر غور کیا گیا۔  

نجی ٹی وی  "دنیا نیوز" کے مطابق اسمبلیوں کی ممکنہ تحلیل کے معاملے پر سیاسی درجہ حرارت بڑھ رہا ہے  جس پر پی ڈی ایم جماعتیں سر جوڑ کر بیٹھ گئی ہیں ۔

نجی ٹی وی کے مطابق اس حوالے سے پی ڈی ایم کے صدر مولانا فضل الرحمان نے وزیر اعظم سے وزیر اعظم ہاؤس میں ملاقات کی جس میں موجودہ ملکی سیاسی اور معاشی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔  وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ حکومت معاشی امور پر بھی  پوری طرح توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں، قوم کو جلد ریلیف دیا جائے گا۔

ملاقات میں پی ٹی آئی کی سیاسی حکمت عملی کا ہر سطح پر مقابلہ کرنے اور عمران خان کی کسی دھمکی کا اثر نہ لینے پر اتفاق کیا گیا ۔دونوں رہنماؤں میں  قبل از انتخابات  کے مطالبے سمیت کسی بھی دباؤ کو قبول نہ کرنے پر اتفاق کیا گیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ اسمبلیاں توڑنے والا پہلے  اپنی جماعت کے اندرونی خلفشار کو سنبھالے ۔

  خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین  عام انتخابات کا اعلان نہ ہونے کی صورت میں پنجاب اور خیبرپختونخوا کی اسمبلیاں تحلیل کرنے کا اعلان کر چکے ہیں جس کے بعد  ملک میں یہ بحث چھڑ چکی ہے کہ کیا  دونوں اسمبلیاں تحلیل ہونےپر  الیکشن کمیشن عام انتخابات کرانےپر مجبور ہو جائے گا یا ملک کے 66 فیصد حصے میں ضمنی انتخابات کرائے جائیں گے۔

ادھر وفاقی حکومت  کہہ چکی ہے کہ صوبائی اسمبلیوں کو تحلیل سے روکنے کیلئے ہر ممکن قدم اٹھایا جائے گا جبکہ الیکشن کمیشن بھی واضح کر چکا ہے کہ جن جن حلقوں کے ممبران مستعفی ہوں گے وہاں ضمنی الیکشن کرایا جائے گا۔

مزید :

قومی -