جنوبی وزیر ستان،تین ماہ سے لاپتہ شخص پیش نہ کرنے پر عدالت کی برہمی 

  جنوبی وزیر ستان،تین ماہ سے لاپتہ شخص پیش نہ کرنے پر عدالت کی برہمی 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

جنوبی وزیرستان (نمائندہ خصوصی) تین ماہ سے لاپتہ شخص کو پیش نہ کرنے پر عدالت کی برہمی اگلی پیشی پر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر لوئر کو حاضر ہونے کا حکم، زرائع کے مطابق تحصیل بنوں سے تعلق رکھنے والے عجب گل نامی شخص کو ایک افغانی کی جانب سے لین دین کے معاملے پر وانا پولیس نے ایف آئی آر درج کرکے گرفتار کرلیا تھا جس کو 19 ستمبر کو سیشن کورٹ جنوبی وزیرستان سے ضمانت پر رہا ہونے کے بعد مذکورہ شخص کو مبینہ ذرائع کے مطابق وانا پولیس نے 21 ستمبر کو غوریوالہ تھانے بنوں کے حدود سے دوبارہ مذکورہ شخص کو گرفتار کرکے وانا منتقل کرنے کے بعد ضلعی انتظامیہ اور پولیس حکام کے زیر اہتمام پاک افغان بارڈر پر دونوں فریقین کے مابین لین دین کے تنازعے پر جرگے کے ذریعے تفصیلی مذاکرات اور حساب کتاب کے بعد افغان شہری 70 لاکھ روپے پاکستانی عجب گل کا مقروز نکلا، لیکن اس کے باوجود نہ صرف دونوں حکومتوں نے افغان شہری سے 70 لاکھ روپے ریکوری کیلئے کسی قسم کی اقدامات آٹھانے بلکہ عدالت سے ضمانت پر رہائی کے باوجود گزشتہ تین ماہ سے اسکو وانا پولیس نے غیر قانونی طور پر پابند سلاسل کرکے اپنے تحویل میں رکھا ہوا ہے، جس پر عجب گل کے رشتہ داروں نے سیشن عدالت جنوبی وزیرستان سے رجوع کرنے کے بعد عدالت نے وانا پولیس حکام کو متعدد بار نوٹس جاری کرکے پاکستانی شہری عجب گل کو عدالت میں پیش کرنے کو کہا لیکن گزشتہ روز سیشن کورٹ میں پیشی کے موقع پر وانا پولیس نے پاکستانی شہری کو عدالت کے سامنے پیش نہیں کیا جس پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اگلے پیشی پر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر لوئر وزیرستان کو بذات خود عدالت کے سامنے پیش ہونے کے آحکامات جاری کردیئے ہیں 

مزید :

صفحہ آخر -