نگران وزیر اطلاعات بیر سٹر فیروز جمال شاہ کا کاخیل کی زیر صدارت جرنلسٹس ویلفیئر انڈوومنٹ فنڈ کمیٹی کا اجلاس

    نگران وزیر اطلاعات بیر سٹر فیروز جمال شاہ کا کاخیل کی زیر صدارت جرنلسٹس ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                                                                پشاور(سٹاف رپورٹر) خیبر پختونخوا کے نگران وزیر اطلاعات،ثقافت و سیاحت بیرسٹر فیروز جمال شاہ کاکاخیل نے ہدایت کی ہے صحافیوں کی فلاح و بہبود کے لئے جرنلسٹس ویلفیئر انڈوومنٹ فنڈ رولز کے تحت مالی مشکلات سے دوچار صحافیوں کی درخواستوں پر کارروائی تیز کی جائے اور تمام پہلوؤں سے مکمل درخواستیں کمیٹی میں پیش کی جائیں تاکہ صحافیوں کو بروقت امداد مل سکے. یہ ہدایات انہوں نے سول سیکریٹریٹ میں منعقدہ جرنلسٹس انڈوومنٹ ویلفیئر فنڈ کمیٹی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے د یں. اجلاس میں سیکرٹری اطلاعات و تعلقات عامہ حکومت خیبرپختونخوا سید جبار شاہ، ڈائریکٹر جنرل اطلاعات و تعلقات عامہ محمد عمران خان، ڈائریکٹر پبلک ریلیشنز لیاقت آمین، پریس رجسٹرار انصاراللہ خلجی کے علاوہ کمیٹی ممبران بجٹ آفیسر محکمہ فنانس محمد ایوب، صدر پریس کلب پشاور ارشد عزیز ملک، صدر مردان پریس کلب بخت محمد و دیگر نے شرکت کی. اجلاس کو بتایا گیا کہ کمیٹی کے گزشتہ اجلاس کے فیصلوں کی روشنی میں فنڈ رولز میں ترامیم پر کام جاری ہے. نگران وزیر اطلاعات و تعلقات عامہ خیبرپختونخوا بیرسٹر فیروز جمال شاہ کاکاخیل نے فنڈ رولز میں ترامیم پر کام تیز کرنے کی ہدایت بھی کی. انہوں نے کہا کہ بیروزگاری اور پنشن الاؤنس میں بہتری لانے کی ضرورت ہے تاکہ بیروزگار اور مالی مشکلات سے دوچار سینئر صحافیوں کی بہتر طریقے سے مدد ہو سکے، انہوں نے کہا کہ فنڈ سے متعلق اجلاس باقاعدگی کے ساتھ منعقد کئے جائیں تاکہ مالی معاونت کی درخواستیں تاخیر کا شکار نہ ہوں. یاد رہے کہ نگران وزیر اطلاعات و تعلقات عامہ خیبرپختونخوا بیرسٹر فیروز جمال شاہ کاکاخیل کی زیر صدارت کمیٹی کا یہ دوسرا اجلاس تھا جس میں مختلف صحافیوں کی جانب سے مالی معاونت کے لئے بھیجی گئی درخواستیں پیش کی گئیں اس موقع پر مکمل درخواستوں پر مالی معاونت کی منظوری دی گئی. اجلاس سے خطاب میں وزیر اطلاعات نے کہا کہ صحافی مشکل حالات میں فرائض انجام دیتے ہیں جبکہ حکومتی معاملات میں شفافیت لانے اور حکومتی اقدامات عوام تک پہنچانے میں صحافیوں کا کلیدی کردار ہے. ایسے میں جب صحافی پیشہ ورانہ زمہ داریوں کے دوران بیماری کا شکار ہوں یا ضعیف العمر ہوجائیں تو فنڈ رولز کے تحت ان کی دیکھ بھال کے لئے  ہمیں اپنی ذمہ داریاں بطریق احسن ادا کرنی چاہیے جبکہ اس نیک کام میں دیر نہیں ہونی چاہیئے۔