ضابطہ فوجداری قانون کے تحت اگر ٹرائل 2سال تک مکمل نہ ہو تو ملزم ضمانت کا حق دار ہے،سپریم کورٹ کا ضمانت سے متعلق اہم فیصلہ 

ضابطہ فوجداری قانون کے تحت اگر ٹرائل 2سال تک مکمل نہ ہو تو ملزم ضمانت کا حق ...
ضابطہ فوجداری قانون کے تحت اگر ٹرائل 2سال تک مکمل نہ ہو تو ملزم ضمانت کا حق دار ہے،سپریم کورٹ کا ضمانت سے متعلق اہم فیصلہ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے ضمانت سے متعلق اہم فیصلہ کیا ہے، عدالت نے قتل کے واقعہ میں گرفتار ملزم کی 2لاکھ روپے ضمانتی مچلکوں کے عوض درخواست ضمانت منظور کرلی۔

نجی ٹی وی چینل  دنیا نیوز کے مطابق سپریم کورٹ کے جج جسٹس اطہر من اللہ نے 6صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کیا، سپریم کورٹ نے کہاکہ ضابطہ فوجداری قانون کے تحت اگر ٹرائل 2سال تک مکمل نہ ہو تو ملزم ضمانت کا حق دار ہے، جسٹس اطہر من اللہ نے کہاکہ ضابطہ فوجداری قانون میں ٹرائل میں تاخیر کی حوصلہ شکنی کی گئی ۔