مقبوضہ کشمیر کی آزادی کیلئے ایک ہزار سال بھی لڑنا پڑا تو لڑیں گے ،سردار یعقوب

مقبوضہ کشمیر کی آزادی کیلئے ایک ہزار سال بھی لڑنا پڑا تو لڑیں گے ،سردار یعقوب ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                    مظفرآباد(اے این این)صدر آزاد جموں وکشمیرسردار محمد یعقوب خان نے کہا ہے کہ کشمیری بھارتی غلامی سے آزاد ی حاصل کرکے رہیں گے ۔کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل اور پاکستان کے بغیر کشمیریوں کی سیاسی ،ثقافتی اور مذہبی بقاءمشکل ہوگی۔ہم مزید ایک ہزار سال تک اپنی آزادی کی جنگ لڑیں گے ۔کشمیری گزشتہ دو صدیوں سے اپنی شناخت کی جنگ لڑرہے ہیں ۔اس دوران لاکھوں فرزندوں نے جان کی قربانیاں دیں ،مہاراجہ کی شخصی حکمرانی کے غلاف جدوجہد اور علم بغاوت بلند کرنے کی پاداش میں سبز علی اور ملی خان سمیت دو درجن سرداروں کی زندہ کھالیں اتاری گیں ۔اور پھانسیاں دی گیں ،سدھنوتی کے 15ہزار مزدروں کو دوران قید بھوکا پیاسا رکھ کر مارا گیا ۔لیکن ان تما م تر مظالم کے باوجود کشمیریوں کے حوصلے پست نہیں ہوئے 1948ویں میں صرف صوبہ جموں میں اڑھائی لاکھ کشمیری مسلمانوں کو انتہاپسند ہندووں سے ملکر بھارتی فوجیوں نے شہید کیا ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نجی ٹی وی چینل کو یوم یکجہتی کشمیرکے سلسلے میں دیے گئے انٹرویومیں کیا ۔سردار محمد یعقوب خان نے کہا کہ پاکستانی قوم ہر سال 5فروری کو یوم یکجہتی کشمیرکو ملی جو ش وجذبے سے مناکر قائد اعظم محمد علی جناح کے اس قول پر مہر تصدیق مثبت کرتی ہے ۔کہ کشمیرپاکستان کی شہ رگ ہے ۔سردار محمد یعقوب خان نے کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ ہمار ے آباﺅاجداد نے پاکستان بننے سے 19دن قبل کشمیرکاپاکستان سے الحاق کافیصلہ غازی ملت سردار محمدابراہیم خان کے گھر واقع سرینگر میں ایک قرار داد کے ذریعے کردیا تھا ۔ہر مشکل میں خواہ زلزلہ ہو یا سلاب پاکستانی قوم نے کشمیریوں کی ہر ممکن مدد کرکے اسلامی اخوت کی مثالیں قائم کیں۔جس سے ثابت ہوا کہ کشمیرقائدین نے دور اندیشی کا مظاہر کرتے ہوئے 67 سال قبل جو فیصلہ کیا تھا وہ درست تھا ۔صدر آزادکشمیر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ مبقوضہ کشمیرمیں فرقہ پرست ہندوجماعت نے وادی اور جموں کے درمیاں مذہب کی بنیاد پر جو تقسیم کی لکیر کھنچنے کی کوشش کی ہے ۔اسے ناکام بنانے کیلئے ہمیں متحرک کردار ادا کرنا ہو گا ۔یہ کشمیریوں کی ہزاروں سال پر محیط فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی تاریخ کو مسخ کرنے کی مذموم جسارت ہے اب ہر کشمیر ی سٹیٹ سبجیکٹ جو ہندو مسلم ، سکھ بدھ مت ، عیسائی ہے پر فرض ہے کہ وہ اپنے درخشاں ماضی کو پامال ہونے سے بچانے کیلئے باہمی اتحاد واتفاق کا مظاہر ہ کریں ۔ اور فرقہ پرستوں کی ہر سازش کو ناکام بنا دیں جو تقسیم کرواور حکومت کرو کے فارمولے پر عمل پیرا ہیں ۔


مزید :

صفحہ اول -