حکومت پنجاب نے تعلیمی ایمرجنسی پر عملدرآمد کیلئے آئین کا آرٹیکل 25نافذ کر دیا

حکومت پنجاب نے تعلیمی ایمرجنسی پر عملدرآمد کیلئے آئین کا آرٹیکل 25نافذ کر دیا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                لاہور(ذکاءاللہ ملک) حکومت پنجاب نے لاہور سمیت صوبہ بھر کے سرکاری سکولوں میں طلباءکی حاضری کو سو فیصد بنانے ،سالانہ امتحانات میں تسلی بخش نتائج کو یقینی بنانے اورتعلیمی ایمرجنسی پر عمل درآمد کرنے کےلئے آئین کا آرٹیکل 25نافذ کر دیا۔ زرائع کے مطابق صوبہ بھر کی ضلعی حکومتوں اور ضلعی ایجوکیشن آفیسرز کو ہدایات جاری کر دی گئیں ہیں جسمیں آرٹیکل 25کے مطابق 5سے 16سال کے بچوں کو مفت تعلیم دلوائی جائے گی اور صوبہ بھر کے نجی سکولوں میں 10فیصد کوٹہ فری ایجوکیشن یا مفت تعلیم حاصل کرنے کے لئے رکھا گیا ہے۔ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ سکولوں میں اپنے بچے نہ بھیجنے والے والدین کو حکومت کی طرف سے کسی بھی قسم کی مالی امداد بھی بند کر دی جائے گی جبکہ سکولوں میں بچوں کی حاضری اور اخراج کا کمپیوٹرائز آئن لائن ریکارڈ بھی محفوظ کرنے کے احکامات جاری کر دئے گئے ہیں۔صوبہ بھر کے سرکاری سکولوں میں تمام تعلیمی سہولیات کو یقینی بنانے کےلئے اور تعلیمی اداروں میں بچوں کی حاضری کےلئے ضلعی سطح پر کمیٹیاں تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جو روزانہ کی بنیاد پر مانیٹرنگ و انسپکشن کرنے کے بعد محکمہ ایجوکیشن کو رپورٹ کرنے کی پابند ہو نگی۔سرکاری سکولوںمیں بچوں کی غیر حاضری ،سالانہ امتحانات میں ناقص نتائج کے حامل تعلیمی اداروں کے ذمہ دار سکولوں کے سربراہان ہونگے جنکی پروموشن روک لی جائے گی اور محکمانہ کاروائی بھی کی جائے گی۔آرٹیکل 25کا نفاذ ہونے کے بعد لاہور سمیت صوبہ بھر پرائمری، مڈل سرکاری سکولوں میں پڑھنے والے بچوں کی مکمل تفصیلات ،اساتذہ کی تعداد اور انتظامی معاملات کا ریکارڈ اکھٹا کرنے کے احکامات ضلعی حکومتوں اور ایگزیکٹیو ایجوکیشن آفیسرز کو جا ری کر دئے گئے ہیں۔رابطہ کرنے پر ایڈیشنل سیکرٹری سکولز ایجوکیشن پنجاب علی احمد کمبوہ نے بتایا کہ سرکاری سکولوں میں معیار تعلیم بہتر بنانے اور 100فیصد حاضری کو یقینی بنانے کےلئے حکومت پنجاب کی طرف سے آرٹیکل 25کا نفاذ کیا گیا ہے۔مطلوبہ نتائج پر پورا نہ اترنے والے اساتذہ و افسران کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے گی جبکہ بہتر کارکردگی دکھانے والے افسران و استاتذہ کی ہر طرح سے حوصلہ افزائی کی جائے گی۔ انہوں کا مزید کہنا تھا کہ تمام سکولوں میں انرول ہونے والے بچوں کا پورا ریکارڈ آن لائن کیا جائے گا جس میں بوگس داخلے کرنے کی کوئی گنجائش نہیں رہے گی۔


مزید :

صفحہ اول -