میٹروبس کراچی ، بحریہ ٹاﺅن منصوبے کے لیے حکومت سندھ کو قرض دینے پر متفق

میٹروبس کراچی ، بحریہ ٹاﺅن منصوبے کے لیے حکومت سندھ کو قرض دینے پر متفق
میٹروبس کراچی ، بحریہ ٹاﺅن منصوبے کے لیے حکومت سندھ کو قرض دینے پر متفق

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) بحریہ ٹاﺅن کی طرف سے حکومت سندھ کو میٹروبس منصوبے کے لیے 42ارب روپے قرض دینے پر اتفاق کرلیاگیاہے ۔ یہ اتفاق سابق صدر آصف علی زداری، چیئرمین بحریہ ٹاﺅن ملک ریاض حسین، وزیراعلی سندھ سندھ قائم علی شاہ سمیت تمام کیبنٹ ممبران اور بحریہ ٹاﺅن ٹیم کے افسران کا خصوصی اجلاس ہوا جس میں میٹرو بس کراچی کے منصوبے کا جائزہ لیاگیا۔ کراچی میٹرو بس54 کلومیٹر طویل ہے جو سپر ہائی وے سے ٹاوراور سپرہائی وے سے ایئر پورٹ براستہ ملیرکینٹ ،2 روٹس پر مبنی ہے۔اس عظیم الشان منصوبے کی کل لاگت 70 ارب روپے ہے جس میں سے42 ارب روپے بحریہ ٹاﺅن 15 سال کے قرضے کے طور پر سندھ حکومت کو دے گا۔
ایکسپریس نیوز کے مطابق اس سلسلے میں بحریہ ٹاﺅن حکومت سندھ کے مابین جلد ایک معاہدے پر دستخط ہوں گے اور بقیہ 20 ارب روپے سندھ حکومت وفاقی حکومت سے مانگے گی، اور8 ارب روپے سندھ حکومت اپنے بجٹ سے اس منصوبے کیلیے مختص کرے گی۔ گزشتہ 3 ماہ میں اس منصوبے کا ڈیزائن مکمل کیا جا چکا ہے اور(ای آئی اے)environmental منظوری بھی حاصل ہوچکی ہے، اس منصوبے کے لیے ڈائیووسے یاداشت پر بھی طے پا چکی ہے۔
معاہدے کی رو سے اس میٹرو بس پروجیکٹ میں hybridڈائیوو بسیں چلنے کے ساتھ ساتھ تمام تر آپریشنل معاملات بھی ڈایو¿ کمپنی خود سنبھالے گی جو اس کی بہترین سروس کی ضمانت ہوگی۔ حکومت سندھ اور بحریہ ٹاو¿ن کے معاون کیساتھ ملکی ترقی اور پبلک انسٹرکچر کی تعمیر میں یہ منصوبہ ایک تاریخی عملی کردار ادا کرے گا۔

مزید :

کراچی -