گوگل نے داعش کیخلاف عربی بولنے والوں کو تیار کرلیا

گوگل نے داعش کیخلاف عربی بولنے والوں کو تیار کرلیا
گوگل نے داعش کیخلاف عربی بولنے والوں کو تیار کرلیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) داعش کی طرف سے اردن کے پائلٹ کو زندہ جلائے جانے کی ویڈیو یوٹیوب پر آنے کے بعد شدت پسندی پر مبنی موادکو انٹرنیٹ پر آنے سے روکنے کے لئے ٹیکنالوجی کمپنی گوگل متحرک ہوگئی ہے اور اس نوعیت کے مواد کا قلع قمع کرنے کے لئے عربی سمجھنے والے لوگوں کی ایک بڑی تعداد کو دنیا بھر میں متعین کرنے کا منصوبہ بنالیا گیا ہے۔

اردن کے باد شاہ نے خود داعش کیخلاف خود میدان جنگ میں اترنے کا فیصلہ کر لیا
مغربی میڈیا کے مطابق یوٹیوب پر شدت پسندی کو فروغ دینے اور نوجوانوں کو جنگجوﺅں کے طور پر بھرتی کرنے کے لئے تیار کی گئی ویڈیوز کو روکنے کے لئے گوگل دنیا کے مختلف ممالک میں Moderatoras بھرتی کررہا ہے۔ گوگل کی طرف سے یہ نہیں بتایا گیا کہ کل کتنے افراد بھرتی کئے جارہے ہیں لیکن یہ اطلاعات سامنے آئیں ہیں کہ عربی زبان میں مہارت رکھنے والے افراد کو شدت پسندی پر مبنی ویڈیوز کو سوشل میڈیا پر آنے سے روکنے کے لئے بڑی تعداد میں ذمہ داریاں سونپی جارہی ہیں۔ اردن کے پائلٹ کو جلائے جانے کی 22منٹ پر مبنی ویڈیو یوٹیوب پر بھیجی گئی تھی اور جب تک گوگل حکام اسے ہٹانے میں کامیاب ہوئے تو یہ لاکھوں مرتبہ دیکھی جاچکی تھی اور دیگر سوشل میڈیا ویب سائٹوں تک بھی پھیل چکی تھی۔
تھنک ٹینک Quilliam کے تحقیق کار جوناتھن رسل کا کہنا ہے کہ داعش کی طرف سے مغربی ممالک کے نوجوانوں کو اپنی طرف راغب کرنے کے لئے انٹرنیٹ کا وسیع پیمانے پر استعمال کیا جارہا ہے اور عام طور پر یوٹیوب پر ایسی ویڈیوز اپ لوڈ کی جاتی ہیں جو نوجوانوں کو جنگجو بننے کی ترغیب دیتی ہیں۔
جوناتھن رسل نے اس امید کا بھی اظہار کیا ہے کہ انتہا پسند ویڈیوز کے خلاف گوگل کا ایکشن نہایت موثر ثابت ہوگا اور گوگل کے علاوہ بھی بڑی بڑی انٹرنیٹ کمپنیاں شدت پسندوں کی طرف سے بھیجے جانے والے مواد کو روکنے کے لئے سرگرم ہوچکی ہیں۔
یوٹیوب پر قابل اعتراض مواد کو صارفین کی طرف سے نشاندہی کرنے کی سہولت پہلے ہی دستیاب ہے اور جب صارفین کی بڑی تعداد کسی بھی ویڈیو کو متنازع قرار دیتی ہے تو یوٹیوب انتظامیہ اس کے خلاف ایکشن لیتی ہے لیکن گوگل کا حالیہ اقدام متازعہ ویڈیوز کے خلاف بڑے پیمانے پر کارروائی کی نشاندہی کرتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ گوگل ساری دنیا میں عربی کے ماہرین کو بھرتی کررہا ہے۔