تائیوان طیارہ حادثے کی ممکنہ بنیادی وجہ سامنے آگئی

تائیوان طیارہ حادثے کی ممکنہ بنیادی وجہ سامنے آگئی
تائیوان طیارہ حادثے کی ممکنہ بنیادی وجہ سامنے آگئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

تائی پے( مانیٹرنگ ڈیسک) گذشتہ دنوں تائیوان میں جہاز کے حادثے کے بعد تحقیقات کار بھی میدان میں آگئے اور بالآخر طیارے کی تباہی کی بنیادی وجہ کا کھوج لگانے میں کامیاب ہوگئے ۔تائیوان کے حکام کا کہنا ہے کہ دارالحکومت تائی پے میں دریا میں گرنے والے مسافر طیارے کی تباہی کی وجہ اس کے دونوں انجن فیل ہونا بنی۔

  بدھ کو تباہ ہونے والے طیارے سے 35لاشیں نکال لی گئی ہیں جبکہ آٹھ تاحال لاپتہ ہیں ،  حادثے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم نے جمعے کو ٹرانز ایشیا ایئرلائنز کے طیارے کے بلیک باکس کا جائزہ لینے کے بعد بتایا کہ اس ٹربو پروپیلر طیارے کے دونوں انجنوں نے اڑان بھرنے کے دو منٹ بعد ہی کام کرنا چھوڑ دیا تھا۔  بلیک باکس کے جائزے سے یہ بھی پتہ چلا ہے کہ عملے نے ایک مرتبہ انجن دوبارہ چلانے کی بھی کوشش کی لیکن ناکام رہا۔ 

امدادی کارکنوں نے جمعے کو ملبے سے پائلٹ کی لاش بھی برآمد کرلی  اور بتایا گیاہے کہ لیاؤ چین سنگ کی لاش اس حالت میں ملی کہ ان کا ہاتھ طیارے کا رخ موڑنے والی سٹک پر تھا۔ یادرہے کہ یہ جہاز تائی پے کے ہوائی اڈے سونگشن سے کن من جزیرے کی جانب روانہ ہوا تھا اور ہوائی اڈے سے اڑتے ہی پُل سے ٹکر کر دریا میں گر گیا تھا۔  بہت سے چینی سیاح کن من جزیرے کے ذریعے تائیوان آتے ہیں۔