کیا بھوکا رہنے سے وزن کم ہو جاتاہے؟سائنس نے حقیقت بیان کر دی

کیا بھوکا رہنے سے وزن کم ہو جاتاہے؟سائنس نے حقیقت بیان کر دی
کیا بھوکا رہنے سے وزن کم ہو جاتاہے؟سائنس نے حقیقت بیان کر دی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

گلاسگو (نیوز ڈیسک) موٹاپے کا شکار افراد اس مصیبت سے نجات کے لئے مشکل سے مشکل اقدامات کرنے کے لئے تیار ہوجاتے ہیں مگر 1965ءمیں سکاٹ لینڈ سے تعلق رکھنے والا ایک شخص اپنے 207 کلو گرام وزن سے اس قدر تنگ آیا کہ اس نے دبلا ہونے تک مکمل طور پر کھانے پینے سے اجتناب کا فیصلہ کرلیا۔

سبحان اللہ ،سائنس نے اسلام کی ایک اور بات کی تصدیق کر دی
 یہ فیصلہ کرنے کے بعد وہ رائل انفرمری ڈنڈی ہسپتال چلا گیا اور ڈاکٹروں کو بتایا کہ اب وہ اس وقت تک کچھ بھی نہیں کھائے گا جب تک کہ وہ دبلا پتلا نہ ہوجائے۔ اس کا کہنا تھا کہ وہ ہسپتال کو یہ موقع دے رہا ہے کہ ماہرین اگر چاہیں تو اس کی مانیٹرنگ کرکے اس دلچسپ تجربے سے نہایت اہم معلومات حاصل کرسکتے ہیں۔ اس کے بعد اس موٹے شخص نے واقعی کھانا بند کردیا ہے اور یہ سلسلہ ایک سال 17 دن تک جاری رہا۔ اس دوران اس نے واقعتاً کچھ نہیں کھایا اور صرف پانی پر زندہ رہا اور ایک سال 17دن کے بعد اس کا وزن 125کلوگرام کم ہوچکا تھا۔
 ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اگرچہ اس شخص نے انتہائی خطرناک طریقہ اختیار کیا ہے اور اس کے وزن میں نمایاں کمی بھی ہوئی لیکن یہ موٹاپا کم کرنے کا جان لیوا طریقہ ہے اور اس طرح سے جان جانے کا خدشہ بہت زیادہ ہے۔ یہی تجربہ کرتے ہوئے ایک شخص بھوکا رہنے کے تیرہویں دن ہلاک ہوگیا جب کہ ایک اور شخص بھوکا رہنے کے دوران تو ہلاک نہ ہوا البتہ جب اس نے دوبارہ کھانا شروع کیا تو اس کے جسم میں کچھ ایسی خرابیاں واقع ہوئیں کہ وہ موت کے منہ میں چلا گیا۔

مزید :

تعلیم و صحت -