کینیڈین سپریم کورٹ نے ڈاکٹرز کی مدد سے ’خودکشی ‘کو قانونی قرار دیدیا

کینیڈین سپریم کورٹ نے ڈاکٹرز کی مدد سے ’خودکشی ‘کو قانونی قرار دیدیا
کینیڈین سپریم کورٹ نے ڈاکٹرز کی مدد سے ’خودکشی ‘کو قانونی قرار دیدیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ٹورنٹو(مانیٹرنگ ڈیسک) کینیڈا کی سپریم کورٹ نے ڈاکٹروں کی مدد سے خودکشی کرنے کے عمل کو قانونی حیثیت دیدی۔ تفصیلات کے مطابق عدالت نے 1993 میں دیئے گئے فیصلے کو یکسر منسوخ کرتے ہوئے قرار دیا کہ ایسے افراد جو ذہنی بیماریوں کا شکار ہوں یا شدید جسمانی بیماری میں مبتلا ہوں انہیں یہ اجازت ہو گی کہ وہ کسی ماہر ڈاکٹر کی مدد سے اپنی موت کا سامان پیدا کر سکیں۔ عدالت کی طرف سے یہ فیصلہ متفقہ طور پر جاری کیا گیا ہے جبکہ اس فیصلے کا نفاذ آئندہ 12ماہ میں عمل میں لایا جائے گا۔ یہ فیصلہ ایسے کیس میں دیا گیا جو گلوریا ٹیلر نامی خاتون کی طرف سے دائر کیا گیا تھا۔ گلوریا شدید ذہنی بیماری میں مبتلا تھیں اور مرنا چاہتی تھیں مگر یہ فیصلہ ان کی زندگی میں نہ ہو سکا اور وہ 2012میں اپنی بیماری کے سبب ہی قدرتی موت کا شکار ہو گئی تھیں۔

شوہر کی موت کی خبر فیس بک پر ملی ، شوہر آخر ی ملاقات میں دھند چھاجانے کی دعا کررہے تھے : مسز معاذ الکساسبہ