18ویں ترمیم کو چھیڑنے کا مقصد ’’نا معلوم ‘‘ افراد کے بجٹ میں اضافہ کرنا ہے ،اسفند یارولی

18ویں ترمیم کو چھیڑنے کا مقصد ’’نا معلوم ‘‘ افراد کے بجٹ میں اضافہ کرنا ہے ...

  



جدہ ،پشاور(این این آئی)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے ایک بار پھر واضح کیا ہے کہ اٹھارویں ترمیم کی مالی شق کو چھیڑنے کا بنیادی مقصد ’’نا معلوم افراد‘‘ کے بجٹ(بقیہ نمبر67صفحہ12پر )

میں اضافہ کرنا ہے اور اس کو چھیڑنے کا نقصان ملک کو ہو گا ،صدارتی نظام کسی طور قبول نہیں کریں گے ، صدارتی نظام پنجاب کو پاکستان تصور کرنے کے سلسلے کی ایک کڑی ہے جس کی اے این پی بھرپور مخالفت کرے گی،ان خیالات کا اظہار انہوں نے سعودی عرب کے شہر جدہ میں باچا خان اورولی خان کی برسی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انہوں نے باچا خان اور ولی خان کو تحریک آزادی و جمہوریت کیلئے قربانیوں پر خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ چالیس سال قبل ہمارے اکابرین نے جو پیشگوئیاں کی تھیں وہ سچ ثابت ہوئیں البتہ بدقسمتی سے اس وقت انہیں غدارجیسے القابات سے نوازا گیا ، انہوں نے کہا کہ آج رد الفساد شروع کر کے ہمارے اسلاف کی باتوں کی تقلید کی گئی،افغانستان امن مذاکرات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ مذاکراتی عمل میں افغان حکومت کی شرکت ضروری ہے اور چین و روس اس حوالے سے اپنا مؤثر کردار ادا کریں ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ پر امن افغانستان کے بغیر پرامن پاکستان کا تصور ناممکن ہے ،اور مذاکرات کی ناکامی کی صورت میں تباہی ایک بار پھر پاکستان کا مقدر ہو گی،انہوں نے کہا کہ پختونوں کو ہر دور میں امتیازی سلوک کا نشانہ بنایا گیا، کرتارپور راہداری کھول کر دوستانہ تعلقات کو فروغ دینے والے طورخم بارڈر کی بندش پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔انہوں نے تعجب کا اظہار کیا کہ نواز شریف کے بیٹوں کو وراثت کے معاملے پر جے آئی ٹی میں پیش کیا جاتا رہا جبکہ سلائی مشینوں والی باجی کو صرف جرمانہ کر کے چھوڑ دیا گیا ، انہوں نے کہا کہ موجودہ احتساب نیب کے کردار پر بدنما داغ ہے۔چیئرمین نیب میں ہمت ہے تو علیمہ خان پر ہاتھ ڈالیں ، میری ملائشیا اور دبئی میں جائیدادوں کا ڈھنڈورا پیٹنے والوں کی اپنی اربوں کی جائیدادیں نکل آئیں،پی ٹی آئی کی سابق صوبائی حکومت کے دور میں جن 350ڈیموں کی تعمیر کا ذکر کیا گیا وہ پشاور کے سڑکوں پر آج بھی موجود ہیں ،انہوں نے کہا کہ مسلط وزیر اعظم جن پارٹیوں کو چور اور ڈاکو کہتے رہے ان میں لوگوں کو لے کر تحریک انصاف کو بیساکھیاں فراہم کی گئیں،پشاور میں بی آر ٹی کے نام پر ہونے والی اربوں کی کرپشن احتسابی اداروں کی نظروں سے اوجھل ہے انہوں نے کہا کہ احتسابی ادارے صرف لاہور اور پشاور میٹرو کی تحقیقات کر لیں دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہو جائے گا،مہنگائی کی جاری لہر پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسفندیار ولی خان نے کہا کہ آئے روز بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کر کے غریب عوام پر زندگی کے دروازے بند کئے جا رہے ہیں،انہوں نے بیرون ملک مقیم ساتھیوں کو خراج تحسین پیش کیا کہ وہ اپنے گھروں اور اہل و عیال سے دور محنت کے ساتھ ساتھ باچا خان کا نظریہ ساتھ لے کر چل رہے ہیں انہوں نے کہا کہ بیرون ملک مقیم ساتھی ان ممالک کے قوانین کا احترام کریں۔

اسفند یار ولی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...