حضورؐ نے منکر ین عقیدت ختم نبوت کیساتھ کبھی مفاہمت میں سودے بازی نہیں کی تھی ،مفتی امتیاز مروت

حضورؐ نے منکر ین عقیدت ختم نبوت کیساتھ کبھی مفاہمت میں سودے بازی نہیں کی تھی ...

  



تیمرگرہ ( بیورو رپورٹ ) مرکزی مجلس تحفظ ختم نبو ت کے امیر مفتی امتیاز مروت نے کہا ہے کہ حضور ﷺ نے منکرین عقیدہ ختم نبوت کے ساتھ کبھی مفاہمت اور سودابازی نہیں کی تھی بلکہ ان کے ساتھ اعلان جنگ کیا تھا اس لئے عقیدہ ختم نبوت کے منکرین کی سزا صرف اور صرف سزائے موت ہے ان خیا لات کا اظہار انھوں نے بلامبٹ مانوگی کے جامع مسجد میں عقیدہ ختم نبوت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پرقاری صدیق اللہ نے بھی خطاب کیا مفتی امتیاز مروت نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت ختم ہونے سے دین مسمارہوگا انھوں نے کہا کہ حضور ﷺ نے فرمایا تھا کہ میرے وفات کے بعد 30افراد نبوت کی جھوٹا دعویدار ہو نگے انھوں نے کہا عقیدہ ختم نبوت پر 1200صحابہ کرام اور تا بعین شہید کئے گئے تھے اور ناموس رسات پر قربانی ایمان کی نشانی ہے انھوں نے کہا غلام محمد قا دیا نی نے1900 میں نبوت کا جھوٹا دعوی ٰ کیا تھاجبکہ 1953 میں عطا و للہ شاہ بخاری نے ختم نبوت تحریک چلائی اور اس میں 10ہزار مسلمانوں نے شہادتیں دی انھوں نے کہا کہ قا دیانی اپنے مشن کے لئے سرگرم ہیں جس سے مسلمانوں کو بچنا ہوگا انھوں نے کہا کہ بحثیت مسلمان ہماری عقیدہ ہے کہ حضور ﷺپر نبوت ختم ہوچکا ہے اور ان کے بعد کوئی نبی ائیگا انھوں نے کہا کہ عوام کی بڑی قر بانیوں اور شہادتوں کی نتیجہ میں 7ستمبر 1974کو پارلیمنٹ نے قا دیانیوں کو غیر مسلم قرار دیا تھا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...