کلین سوئپ شکست سے بچنے کا آج آخری موقع

کلین سوئپ شکست سے بچنے کا آج آخری موقع
کلین سوئپ شکست سے بچنے کا آج آخری موقع

  



ٹی ٹونٹی سیریز میں پاکستان کی شکست نے قومی ٹیم کو ٹی ٹونٹی کرکٹ رینکنگ میں تیسری پوزیشن پر دھکیل دیا پہلی پوزیشن پر براجمان قومی ٹیم افریقہ کے خلاف سیریز میں عمدہ پرفارمنس دکھانے میں ناکام ثابت ہوئی شعیب ملک کی کپتانی بھی ٹیم کے کام نہ آئی بہرحال ٹیم نے سیریز کے دونوں میچوں میں بھرپور فائٹ کی اور خاص طور پر بیٹنگ لائن نے متاثر کن کھیل پیش کیا دونوں ٹیمیں آج تیسرے اور آخری ٹی ٹونٹی میں مدمقابل آرہی ہیں اب دیکھنا یہ ہے کہ آخری میچ میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی کیسی رہتی ہے آج کھیلے جانے والا میچ اس لحاظ سے بھی بہت اہمیت کاحامل ہے

کیونکہ آج شکست کی صورت میں ٹیم کو کلین سوئپ شکست کاسامنا کرنا پڑے گا افریقہ کی ٹیم اپنے ملک میں اب تک ہر ٹیم کیخلاف ناقابل شکست رہی ہے مگر ون ڈے اور ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کی عمدہ پرفارمنس سے لگ رہا تھا کہ مختصر فارمیٹ کی کرکٹ میں بھی پاکستان کی ٹیم میزبان ٹیم کو چت کرنے میں کامیاب ہوجائے گی پہلے دونوں میچز میں افریقہ کی ٹیم نے پہلے بیٹنگ کی اور بعد میں سکور چیز کرنے کی کوشش میں پاکستان کی ٹیم نے بھی عمدہ پرفارمنس دیناے کی کوشش کی جو خوش آئند بات ہے

جس طرح سے پاکستانی بیٹنگ نے ذمہ دارانہ کھیل پیش کیا اور خاص طور پر اوپنرز نے بہت اچھا سکور کیا فخر زمان مکمل فارم میں نظر آرہے ہیں ان کے ساتھ بابر اعظم اور طلعت حسین کی بیٹنگ نے بھی بہت متاثر کیا ہے آج کھیلے جانے والا میچ پاکستان کے لئے جیتنا بہت ضروری ہے اور کامیابی کی صورت میں پاکستان کی ٹیم ایک مرتبہ دوبارہ دوسری پوزیشن پر براجمان ہوسکتی ہے اور شکست کی صورت میں اس کی رینکنگ مزید کمزور ہوجائے گی قومی ٹیم کی قیادت شعیب ملک کررہے ہیں جو بہت تجربہ کار کپتان ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ پریشر میں بہت عمدہ بیٹنگ کرنے کی بھی مہارت رکھتے ہیں آج ان کی کپتانی بھی امتحان ہے شائقین کرکٹ کوامید ہے

کہ آج کے میچ میں ٹیم ایک نئے روپ میں نظر آئے گی دوسری طرف جنوبی افریقہ کی ٹیم جس میں اس وقت کئی اہم کھلاڑی ایکشن میں نظر نہیں آرہے ہیں نے بھی بہت اچھی پرفارمنس دی ہے آج کا میچ بھی امید ہے کہ دونوں ٹیموں کے درمیان سنسنی خیز ثابت ہوگا پاکستان کی ٹیم کو آج کے اہم میچ میں پریشر میں کھیلنے کی ضرورت نہیں ہے اور اگر قومی ٹیم ٹاس جیت جاتی ہے تو اس کو پہلے بیٹنگ کرنی چاہئیے اس طرح ٹیم کے کھلاڑیوں پر کم دباؤ ہوگا دوسری طرف ورلڈ کپ سر پر ہے اور سرفراز احمد کی کپتانی بھی اس وقت خطرہ میں لگ رہی ہے

اب ان کی جگہ کسی اور کھلاڑی کو کپتان بنایا جاتا ہے کہ ان کو ہی ایک مرتبہ دوبارہ کپتان مقرر کیا جاتا ہے یہ ایک اہم سوال ہے اور اس حوالے سے پاکستان کرکٹ بورڈ مشاورت میں مصروف ہے ایسے وقت میں جب ورلڈ کپ میں تین ماہ رہ گئے ہیں کپتانی کا مسئلہ ٹیم کے لئے اچھی بات نہیں ہے سرفراز احمد پر لگائی جانے والی پابندی سے بھی کھلاڑی یقینی طور پر ڈسٹرب ہوں گے اور ضرورت اس بات کی ہے کہ کھلاڑیوں کو ایسی حرکات سے باز رہنا چاہئیے اس میں کوئی شک نہیں کہ سرفراز احمد کی کپتانی میں قومی کرکٹ ٹیم نے مسلسل بارہ ٹی ٹونٹی میچز میں کامیابی حاصل کی تھی اور اس سیریز میں اس کو ان کی غیر موجودگی میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے اس کی وجہ یہ ہے

کہ سرفراز احمد ایک منجھے ہوئے کپتان ہیں اور وہ ٹیم کو بہترین انداز سے ساتھ لیکر چلنے کی بھرپور صلاحیت رکھتے ہیں امید ہے کہ پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان آج کھیلے جانے والے میچ یمں پاکستان کی ٹیم بہت عمدہ پرفارمنس کا مظاہرہ کرے گی اور شائقین کرکٹ نے ان سے جو امیدیں وابستہ کی ہوئیں ہیں اس پر بھی پورا اتریں گی اس سیریز کے آخری میچ کے بعد پاکستان کی ٹیم نے کافی عرصہ تک کرکٹ سے دوری اختیار کرنی ہے

اور اس عرصہ میں کھلاڑیوں کو اس بات کی ضرورت ہے کہ وہ کھیل پر بھرپور توجہ دیں اور پرفارمنس کو مزید بہتر کریں جنوبی افریقہ کی ٹیم ہمیشہ سے ہی حریف ٹیموں کے لئے ایک بہت مضبوط ٹیم رہی ہے اور جب وہ اپنے ملک میں کھیل رہی ہو تو اس کوشکست دینا آسان بات نہیں ہوئی امیدہے کہ پاکستان کی ٹیم آج ایک نئے جوش و جذبہ سے جیت کا عزم لیکر میدان میں اترے گی اور کامیابی حاصل کرکے بدترین شکست سے بچ جائے گی۔

۱

مزید : رائے /کالم


loading...