پی سی بی کا سرفراز کو ورلڈ کپ تک کپتان رکھنے کا اعلان

پی سی بی کا سرفراز کو ورلڈ کپ تک کپتان رکھنے کا اعلان

  



لاہور (سپورٹس رپورٹر)پاکستان کرکٹ بورڈکے چیئرمین احسان مانی نے سرفراز احمد کو ورلڈ کپ 2019 تک پاکستان کرکٹ ٹیم کا کپتان برقرار رکھنے کا اعلان کردیا،انہوں نے کہا کہ سرفراز کی پاکستان کرکٹ کے لیے خدمات سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔ وہ قیادت کی صلاحیتوں سے مالا مال ہیں جہاں انہوں نے انڈر 19، کراچی اور پی آئی اے کی قیادت کی اور ریکارڈ بہت اچھا رہا ہے، ہرسیریزکے بعدکھلاڑیوں،کوچ اورٹیم مینجمنٹ کی کارکردگی دیکھتے ہیں ، ہمیشہ پاکستان کرکٹ اورٹیم کی بہتری سے متعلق سوچتے ہیں، محمدحفیظ،شعیب ملک ورلڈکپ 2019کے بعدریٹائرمنٹ لے لیں گے، محمدحفیظ سمیت تمام کھلاڑی صرف پاکستان کیلئے کھیلتے ہیں، ہارجیت کھیل کاحصہ ہے،ٹیم کی کارکردگی بہترہونی چاہیے،ٹیم کے نائب کپتان سے متعلق کرکٹ کمیٹی سے بات کروں گا۔۔منگل کو لاہور میں پی سی بی ہیڈکوارٹر میں سرفراز کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے احسان مانی نے کہا کہ سرفراز ہی پاکستان کے کپتان ہیں اور ورلڈ کپ میں وہ ہی پاکستان ٹیم کی قیادت کریں گے۔پی سی بی چیئرمین نے کہا کہ جب سرفراز 2017 میں کپتان بنے تو ہماری ٹیم ون ڈے کرکٹ کی عالمی درجہ بندی میں 9ویں نمبر پر موجود تھی اور ٹیم کی تنزلی کا خطرہ بھی موجود تھا جس کے نتیجے میں ہمیں ورلڈ کپ کا کوالیفائنگ رانڈ کھیلنا پڑتا لیکن یہ ٹیم کو اٹھا کر لائے جو آج پانچویں نمبر پر موجود ہے۔ پانچویں رینکنگ بھی کم ہے لیکن امید ہے کہ آگے بہتر کارکردگی دکھائیں گے۔احسان مانی نے مزید کہا کہ سرفراز احمد آسٹریلیا سیریز کے ساتھ ساتھ ورلڈ کپ میں بھی قیادت کریں گے اور ورلڈ کپ بعد ہم ان کی کارکردگی کا جائزہ لے کر فیصلہ کریں گے کہ ہمیں آگے کیا قدم اٹھانا ہے۔چیئرمین پی سی بی کا کہنا تھا کہ ہم سب سرفراز کو بحیثیت کپتان سپورٹ کریں گیایک سوال کے جواب میں احسان مانی نے کہا کہ نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز ہمیں جیتنی چاہیے تھی لیکن جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز میں ہم ایک میچ 300 سے زائد رنز بنانے کے باوجود بارش کے باعث ہار گئے، ہار جیت کرکٹ کا حصہ ہے لیکن ہمیں ہارنے سے سبق سیکھنا چاہیے۔کسی سینئر کھلاڑی کو کپتان بنانے کے حوالے سے سوال پر مانی نے کہا کہ ہمیں آگے کا بھی دیکھنا ہے، صرف ورلڈ کپ کا نہیں اور ورلڈ کپ کے بعد کی بھی ٹیم تیار کرتے ہوئے آئندہ چار سے پانچ سال کے لیے ٹیم تیار کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ سرفراز احمد نے بیٹنگ میں چند اچھی اننگز بھی کھیلی ہیں اور سرفراز کی وکٹ کیپنگ کی بات کی جائے تو میرے خیال میں اس وقت ان سے بہتر وکٹ کیپر شاید دنیا میں کوئی نہیں۔احسان مانی نے ٹیسٹ کرکٹ میں بھی سرفراز کی قیادت پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دنیا میں مختلف ٹیمیں ہر فارمیٹ کے لیے الگ کپتان بناتی ہیں لیکن ہمارے لیے یہ موزوں نہیں، ہمیں سرفراز سے امید ہے کہ وہ جلد ٹیسٹ میں بھی ٹیم کو فتوحات کی راہ پر گامزن کریں گے۔سرفراز احمد کی بیٹنگ صلاحیتوں اور دنیا کی دیگر ٹیموں کے کپتانوں سے موازنے کے حوالے سے سوال پر انہوں نے کہا کہ سرفراز کو میرٹ کی بنیاد پر کپتان بنایا گیا ہے، ہم ٹی20 میں عالمی نمبر ہیں اور کپتان فورا نہیں بنتے بلکہ اس میں وقت لگتا ہے۔سرفراز احمد نے چیئرمین پی سی بی کا شکریہ ادا کیا اور انہیں یقین دہانی کرائی کہ وہ ان کے اعتماد پر پورا اترنے کی کوشش کریں گے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی قیادت میرے لیے بہت فخر کی بات ہے اور یہ میرے لیے اعزاز کی بات ہے کہ میرا شمار عمران خان، وسیم اکرم، مصباح الحق اور شاہد آفریدی جیسے ان عظیم کپتانوں میں ہو گا جو ورلڈ کپ میں قیادت کر چکے ہیں۔نئے چیئرمین پی سی بی نے مجھے شروع سے مکمل اعتماد دیتے ہوئے کہا تھا کہ آپ ہی پاکستان ٹیم کے کپتان ہیں اور میں اس اعتماد پر ان کا اور بورڈ کے دیگر اراکین کا شکر گزار ہوں۔

یاد رہے آئی سی سی نے ورلڈکپ 2019 کا شیڈل جاری کر دیا گیا ہے جس کے مطابق ٹورنامنٹ کا پہلا میچ 30 مئی کو انگلینڈ اور جنوبی افریقہ کے درمیان ہوگا، پاکستان پہلا میچ 31 مئی کو ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلے گا۔پاکستان کا 3 جون کو انگلینڈ، 7 جون کو سری لنکا سے مقابلہ ہوگا، قومی ٹیم 12 جون کو آسٹریلیا کے خلاف میچ کھیلے گی جبکہ پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں 16 جون کو مانچسٹر میں ٹکرائیں گی۔پاکستان کا 23 جون کو جنوبی افریقہ، 26 جون کو نیوزی لینڈ کیخلاف میچ ہوگا، قومی ٹیم 29 جون کو افغانستان، 5 جولائی کو بنگلہ دیش کیخلاف کھیلے گی۔ پہلا سیمی فائنل 9 جولائی اور دوسرا 11 جولائی کو کھیلا جائے گا، 14 جولائی کو لارڈز عالمی کپ فائنل کی میزبانی کریگا۔واضح رہے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی چیف ایگزیکٹوز کمیٹی نے آئندہ برس شیڈول ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کو دوبارہ 1992 طرز پر منعقد کرانے کی منظوری دی، میگا ایونٹ میں شریک 10 ٹیمیں آپس میں میچز کھیلیں گی، جن میں سے 4 بہترین ٹیمیں سیمی فائنل میں جگہ بنائیں گی، سیمی فائنلز اور فائنل کیلئے ریزرو ڈے بھی رکھا گیا ہے۔#/s#

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...