سوڈان میں صدر کے خلاف بغاوت کی کوشش کے الزام میں جنرل پر مقدمہ

سوڈان میں صدر کے خلاف بغاوت کی کوشش کے الزام میں جنرل پر مقدمہ

  



جوبا(این این این آئی)جنوبی سوڈان کی ایک فوجی عدالت میں فوج کے ایک جنرل کے عہدے کے افسر کے خلاف خیانت اور صدر سلفاکیر کے خلاف بغاوت کی کوشش کے الزام میں مقدمے کی باقاعدہ کارروائی کا آغاز کردیا گیا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق جنوبی سوڈان کی فوج کے ترجمان جنرل سانٹو ڈمیک نے بتایاکہ جنرل اسٹیفن بوی رولنیانگ پر امن کو تباہ کرنے، خیانت، عسکری احکامات ماننے سے انکار جیسے الزامات عاید کیے گئے ۔جنرل لنیانگ کے خلاف مقدمہ کی سماعت 7 رکنی بنچ کررہا ہے جس کی سربراہی آرمی چیف جنرل جوک ریاک خود کررہے ہیں۔خیال رہے کہ جنرل بوی رولنیانگ کو گذشتہ برس مئی میں فوجی احکامات ماننے سے انکار اور جوبا میں واپس نہ آنے کے بعد گرفتار کیا گیا تھا۔

ترجمان نے کہا کہ جنرل بوی رولنیانگ نے فوجی احکامات کی نافرمانی کی۔ ان کے بریگیڈ میں شامل فوجیوں نے بغاوت اور انحراف کی کوشش کی تھی۔مقدمہ کی سماعت آئندہ جمعرات تک ملتوی کردی گئی ہے۔ بوی کو وکیل کی اجازت دی گئی ہے۔ عدالتی بنج میں شامل عہدیداررتبے میں ملزم سے جونیر ہیں۔جنوبی سوڈان کے صدر سلفاکیر کے نائب ریاک مشار پر بھی حکومت کا تختہ الٹنے کی سازش کی منصوبہ بندی کا الزام عاید کیا گیا تھا۔

مزید : علاقائی


loading...