پوری قوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی، جلسے، جلوس، ریلیاں، مودی بڑی غلطی کر بیٹھا، میرا ایمان ہے کشمیر آزاد ہوگا، بھارتی حکومت ظلم اور جبر کے ذریعے کشمیریوں کی اکثریت کو اقلیت میں بدلنا چاہتی ہے:عمراان خان

        پوری قوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی، جلسے، جلوس، ریلیاں، مودی بڑی غلطی ...

  

اسلام آباد،لاہور، کراچی کوئٹہ،پشاور،مظفر آباد(جنرل رپورٹر، بیورورپورٹس، نمائندگان،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)آزاد کشمیر،گلگت، بلتستان اور شمالی علاقہ جات سمیت ملک بھر میں بدھ کویوم یکجہتی کشمیر اس عزم کے ساتھ منایا گیا کہ کشمیر کی آزادی تک مظلوم کشمیریوں کی سیاسی، سفارتی اور سماجی حمائیت جاری رکھی جائے گی دن کا آغاز مساجد میں تحریک آزادی کشمیر کی کامیابی اور شہدا کشمیر کے درجات کی بلندی کے لئے خصوصی دعاؤں سے کیا گیا جبکہ کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی اس مقصد کے لئے ملک بھرمیں مظلوم کشمیری بھائیوں سے یکجہتی کے لئے سرکاری، نیم سرکاری اور نجی سطح پرمختلف تقریبات کا انعقاد کیا گیاجن میں ضلعی انتظامیہ، سرکاری و نجی تعلیمی اداروں، مذہبی،سیاسی اور سماجی تنظیموں کے علاوہ وکلا، طلبا،مزدور، تاجروں اور مختلف مکاتب فکر کے افراد کی جانب سے ریلیاں، جلسے،جلوس اور سیمینارز منعقد کئے گئے اورانسانی ہاتھوں کی زنجیریں،واکس اور تصویری نمائشوں کے علاوہ بھارتی وزیر اعظم کے پتلے اور بھارتی پرچم بھی نذر آتش کئے گئے اس موقع پر ضلعی انتظامیہ اور سرکاری اداروں کے علاوہ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹیز،جماعت اسلامی، جمعیت علما اسلام (ف)، تحریک لبیک پاکستان، مسلم لیگ ن،پیپلز پارٹی ، عوامی مسلم لیگ،مجلس وحدت مسلمین، پاکستان عوامی تحریک،انجمن تاجران ،انجمن شہریاں کے زیر اہتمام الگ الگ ریلیاں، جلوس اور مظاہرے کئے گئے جن میں سیاسی و سماجی کارکنوں، عام شہریوں، طلبا و طالبات، وکلا،تاجروں اور تمام مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ پاکستان اور آزاد کشمیر کو ملانے والے پلوں پر انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنائی گئی۔ 10 بجے سائرن بجائے گئے، ایک منٹ کے لیے خاموشی اختیار کی گئی۔ بشام شہر میں نکالی گئی ریلی میں سکول کے بچے اور عام لوگ شریک ہوئے۔راولاکوٹ کے ڈھلکوٹ اور آزاد پتن پل پر انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنائی گئی۔ بھمبر آزاد کشمیر میں سیکڑوں افراد نے بھارت کے خلاف احتجاج کیا۔ ظاہر پیر میں نکالی گئی ریلی میں پاک فوج زندہ باد، کشمیر بنے گا پاکستان کے فلک شگاف نعرے لگے۔شیخوپورہ کا ضلع کونسل ہال کشمیر بنے گا پاکستان کے نعروں سے گونج اٹھا۔ اوکاڑہ کی سڑکیں بھی کشمیر بنے گا پاکستان کے فلک شگاف نعروں سے گونج اٹھیں۔ قصور کی ریلی میں سینکڑوں طلباء اور شہریوں نے شرکت کی، مظاہرین نے انڈیا کے خلاف نعرے بازی کی۔گجرات میں پاکستان اور آزاد کشمیر کے قومی ترانے بجائے گئے۔ ننکانہ صاحب کی ریلی میں ڈی پی او نے کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے لگائے۔ رحیم یار خان کی ریلی میں پاک فوج کے حق میں نعرے بازی کی گئی۔ میانوالی میں نجی سکول کے طلباء و طالبات اور ٹیچرز نے ریلی نکالی۔اٹک اور کرک میں جماعت اسلامی کے زیر اہتمام ریلی نکالی گئی۔ پیر محل میں طلبا نے ریلی نکالی اور کشمیریوں کے حق میں نعرے بازی کی۔ بہاولپور میں ریسکیو 1122 کے افسران و عملے نے ریلی نکالی۔ نوشہرہ میں شوبرا چوک سے خیر آباد تک ہاتھوں کی زنجیر بنائی گئی۔ڈیرہ بگٹی میں انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنا کر اظہار یکجہتی کیا گیا۔ خان پور، اوچ شریف میں شہریوں نے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا۔ کشمور میں ہندو پنچائت کی جانب سے کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کے لئے ریلی نکالی گئی۔ڈی جی خان، پاکپتن، ٹھٹھہ، سکردو، صادق آباد، وہاڑی، راجن پور، شکارپور، لیاقت پور، چشتیاں، مردان، شگر، شجاع آباد میں بھی کشمیریوں سے بھرپور اظہار یکجہتی کیا گیا۔ امریکا میں بسنے والے کشمیریوں اور پاکستانیوں نے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے مظاہرہ کیا، نیویارک کے مصروف ترین علاقے مین ہیٹن میں ٹیکسیوں پر کشمیر کی آزادی والے نعروں کے بورڈز لگا دیئے۔فری کشمیر مہم کا اہتمام نیویارک کے ٹیکسی ڈرائیورز نے کیا۔ ٹیکسیوں پر کشمیر کی آزادی کے علاوہ بھارتی مظالم اور کئی ماہ سے جاری کرفیو کے خلاف نعرے درج تھے۔ ٹائم سکوائر میں بھی بڑی تعدا د میں ٹیکسی ڈرائیورز گزرتے رہے۔کشمیری کمیونٹی کا کہنا کے انڈین مظالم کے خلاف احتجاج اور کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کا یہ سلسلہ تین دن جاری رہے گا۔

یوم یکجہتی کشمیر

مظفر آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مودی 5 اگست کو بہت بڑی غلطی کر بیٹھا ہے، میرا ایمان ہے کہ کشمیر آزاد ہوگا، وعدہ کیا تھا کہ میں کشمیر کا سفیر بنوں گا۔وزیراعظم عمران خان نے آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا میں جمہوریت پسند ہوں، جمہوریت جتنی بھی بری ہو پھر بھی بہترین نظام ہے، مغرب ہم سے آگے اس لیے ہے کیونکہ وہاں جمہوریت پہلے آئی، جتنی جمہوریت بڑھے گی اتنی خوشحالی آئے گی، جہاں بادشاہت تھی وہ معاشرے پیچھے رہ گئے، خوشحال ممالک کے پاس شفاف نظام ہے۔عمران خان کا کہنا تھا میری کسی سے کوئی ذاتی دشمنی نہیں، ملک لوٹنے والوں سے مفاہمت کا نہ کہیں، میرے گھر سے کوئی چوری کرے تو کیا میں اسے چھوڑدوں؟ خوشحالی کی سب سے بڑی وجہ شفافیت اور کرپشن سے پاک معاشرہ ہے، یہ ذاتی نہیں، میرے ملک کی لڑائی ہے، چین نے 450 وزرا کو جیلوں میں ڈالا، جس ادارے کی طرف دیکھوں خسارے میں ہے، اپنے اندر کبھی مایوسی نہ لائیں، یہ گناہ ہے۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ مودی نے ساری انتخابی مہم پاکستان کیخلاف کی، مودی نے ہندوتوا فلاسفی کو پروان چڑھایا، مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے کیلئے ہر فورم کا استعمال کیا، ڈونلڈ ٹرمپ کو سمجھایا کہ کشمیر ایشو کیا ہے؟ مودی آر ایس ایس کے نظریے کو اوپر لایا، آر ایس ایس ہٹلر سے متاثر تھی، آر ایس ایس نے یہودیوں کے قتل عام کو سراہا، ہم نے لوگوں کو بتایا کہ آر ایس ایس کا فلسفہ کیا ہے۔ عمران خان نے کہا کہ مودی نے کہا 11 دن میں پاکستان کو فتح کر سکتے ہیں، ایسا بیان دینے والا آدمی نارمل نہیں ہوسکتا، گھبرائے ہوئے لوگ ایسے بیان دیتے ہیں، بھارتی آرمی چیف کہتا ہے ایک اشارہ کریں، آزاد کشمیر فتح کرلیں گے، بھارت دہشتگردی کے نام پر کشمیریوں پر ظلم و تشدد کرے گا، آر ایس ایس مقبوضہ کشمیر کو اکثریت سے اقلیت میں بدلنا چاہتا ہے، دنیا کشمیر کو دیکھ رہی ہے اس لیے بھارت پھنس چکا ہے۔وزیراعظم کا کہنا تھا دہشتگردی کو اسلام سے جوڑ دیا جاتا ہے، ہندو، یہودی دہشتگردی کا کبھی کسی نے کہا؟ بھارت عالمی برادری کی توجہ ہٹانے کیلئے فالس فلیگ آپریشن کرسکتا ہے، دین اور دہشتگردی کا کوئی تعلق نہیں، کشمیر ایشو کو اب اگلے مرحلے میں لے کر جانا ہے، یورپی پارلیمنٹ میں 600 پارلیمنٹیرینز نے قرارداد پاس کی۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاک افغان سرحدی علاقوں پر آمدورفت منظم کرنے سے پولیو وائرس کی روک تھام میں مدد ملے گی۔وزیراعظم عمران خان سے روٹری انٹرنیشنل کے اعلیٰ سطح کے وفد نے ملاقات کی، وفد کی قیادت صدر روٹری انٹرنیشنل ہولگر نیئک نے کی۔ معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا بھی ملاقات میں موجود تھے۔ملک میں پولیو کی موجودہ صورتحال اور پولیو کے مکمل خاتمے کے لیے اقدامات پر گفتگو کی گئی۔ڈاکٹر ظفر مرزا نے پولیو کے خاتمے کے لیے حکومتی اقدامات پر روٹری انٹرنیشنل کے وفد کو بریفنگ دی۔انہوں نے بتایا کہ حالیہ مہم میں ایک لاکھ سے زائد سیکیورٹی اہلکاروں اور ڈھائی لاکھ پولیو ورکرز نے خدمات سرانجام دیں۔معاون خصوصی نے بتایا کہ 5 سال سے کم 4 کروڑ بچوں کو پولیو سے بچاؤ کی ویکسین پلائی گئی۔وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آ ر ایس ایس کے فلسفے پر عمل پیرا بھارتی سرکارکا فاشسٹ چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب ہو چکا ہے، ہر فورم پرکشمیریوں کی آواز بلند کرتا رہوں گا،کشمیریوں کو حق خود ارادیت ملنے تک پاکستان ہر محاذ پر کشمیریوں کی اخلاقی، سفارتی اور سیاسی حمایت جاری رکھے گا صدر تحریک انصاف آزاد کشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی قیادت میں آزاد جموں و کشمیر کے پارلیمانی پارٹی رہنماں، آل پارٹیز حریت کانفرنس کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کشمیریوں کی غیر متزلزل حمایت جاری رکھے گا وزیر اعظم سے ملاقات کرنے والے وفود نے مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر مزید اجاگر کرنے کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان کی کاوشوں کو سراہا وزیر اعظم سے ملاقات کرنے والے وفود میں چیئرمین مسلم کانفرنس سردار عتیق احمد خان، صدر مسلم کانفرنس مرزا شفیق احمدجرال، پارلیمانی لیڈر جماعت اسلامی عبدالرشید ترابی، صدر جماعت اسلامی ڈاکٹر خالد محمود، صدر جموں کشمیر پیپلز پارٹی سردار حسن ابراہیم، اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یسین اور صدر پی پی پی چوہدری لطیف اکبر، آل پارٹیز حریت کانفرنس کے سید عبداللہ گیلانی اور سید فیض نقشبندی، عبدالمجید ملک، سید اعجاز رحمانی، شیخ محمد یعقوب، عبدالمجید میر، شیخ عبدالمتین اور جاوید اقبال بٹ اور دیگر شامل تھے اس موقع پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی، وفاقی وزیر برائے امور کشمیر علی امین گنڈا پور، کشمیر کمیٹی کے چیرمین سید فخر امام، وزیر اعظم آزاد جموں کشمیر راجہ فاروق حیدر اور اسپیکر آزاد جموں کشمیر قانون ساز آسمبلی بھی ملاقات میں موجود تھے۔ وزیر اعظم سے ملاقات کرنے والے وفود نے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عمران خان کی کوششوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کشمیریوں کے لیے حق خود ارادیت کے حصول کے موضوع پر تمام سیاسی جماعتیں، کشمیری عوام پاکستان کی ہم آواز ہیں حریت کانفرنس کے وفد نے مقبوضہ جموں و کشمیر کی موجودہ صورتحال، بھارت سرکار کی جانب سے جابرانہ و یکطرفہ اقدام ، غیر انسانی لاک ڈان اور مواصلاتی ناکہ بندی، بھارتی قابض افواج کے ظلم و ستم اور بنیادی انسانی حقوق کی پامالی کی صورتحال کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کے لئے حکومت پاکستان اور خصوصا وزیر اعظم عمران خان کی کاوشوں کو بھر پور خراج تحسین پیش کیا۔ وفد نے مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر مزید اجاگر کرنے کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان کو تجاویز پیش کیں۔ دوسری طرف وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے کہا ہے کہ پوری قوم مظلوموں کے ساتھ کھڑی ہے، بھارت کے عزائم ناکام بنانے کیلئے جارحانہ پالیسی اپنانا ہوگی۔ قانون ساز اسمبلی کے اجلاس سے وزیراعظم ا?زاد کشمیر راجہ فارق حیدر نے خطاب کرتے ہوئے کہا آج پوری قوم کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کر رہی ہے، کشمیری خود کو اکیلا نہ سمجھیں، ہم سب مقبوضہ کشمیر کے عوام کی پشت پر کھڑے ہیں، پاکستان مشکلات کے باوجود کشمیریوں کی مدد کر رہا ہے، امریکا کبھی ہمارے حق میں بات نہیں کرے گا، امریکا کی جانب سے ثالثی سے بھارت کو فائدہ ہوگا، مسئلہ فلسطین پر امریکی ثالثی سے فلسطین کا بیڑہ غرق ہوگیا۔ راجہ فاروق حیدر کا کہنا تھا پاکستان میں قومی اتفاق رائے پیدا کریں اور قوم کو متحد کریں، ہم کشمیر میں پاکستان کا جھنڈا نہیں گرنے دیں گے۔

عمران خان

راولپنڈی(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایک بار پھر اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ حق خود ارادیت کے حصول کی جدوجہد میں کشمیری اکیلے نہیں، ہم ان کے ساتھ کھڑے ہیں، دنیا کاضمیر جھنجھوڑنے میں اپنا کردار اداد کرتے رہیں گے۔ یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں ریاستی جبر اور جارحیت مسلط کئے ہوئے ہے، کشمیریوں کے حقوق غضب کر کے طاقت کا اندھا دھند استعمال کیا جا رہا ہے، وادی کو جیل میں تبدیل کر کے لاکھوں کشمیریوں کو قید کر دیا گیا ہے، کشمیری اقوام متحدہ سے اپنا حق خودارادیت مانگ رہے ہیں۔پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے مزید کہا کہ مرد، خواتین، بوڑھے، بچے اور بیمار حق خود ارادیت کیلئے جدوجہد کر رہے ہیں، ہندوستانی جبر و استبداد کا ثابت قدمی سے مقابلہ کرنے والے کشمیریوں بہن بھائیوں کو سلام پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ پائیدار امن ابھی تک ایک خواہش سے زیادہ کچھ نہیں، تاہم بھارتی افواج مسلسل ایل او سی پر اشتعال انگیزیاں کر رہی ہیں، جان بوجھ کر آزاد کشمیر کی شہری آبادی کو نشانہ بنایا جا رہا ہے، ہمارے جوانوں اور شہریوں کی لازوال قربانیاں جدوجہد آزادی کو زندہ رکھے ہوئے ہے۔آرمی چیف کا کہنا تھا کہ پاک فوج اپنے فرائض کی انجام دہی میں مستعد ہے، پاک فوج ہر قسم کی جارحیت کا مقابلہ کرنے کی صلاحیت اور استعداد رکھتے ہیں، امن کی خواہش اور بھارت کے ہاتھوں کشمیریوں کے نقصان کے پیش نظر صبر و تحمل کا مظاہرہ کر رہے ہیں، کشمیریوں کیلئے ہماری غیر متزلزل حمایت جاری رہے گی۔چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل ندیم رضا نے اپنے پیغام میں کہا سات دہائیوں سے یو این قراردادوں کے برعکس کشمیری بنیادی انسانی حقوق سے محروم ہیں، مسلح افواج مشکل کی اس گھڑی میں کشمیری عوام کے ساتھ کھڑی ہیں۔ ائر چیف مارشل مجاہد انور خان نے کہا یقین دلاتے ہیں کہ ہم ہر مشکل میں ان کے ساتھ رہیں گے۔ چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے کہا حق خودارادیت کے حصول کی جدوجہد میں ہم کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

آرمی چیف

مزید :

صفحہ اول -