غلط فیصلوں سے حکومتی کشتی ڈوبی تو ہم اس میں سوار نہیں ہونگے، ق لیگ

  غلط فیصلوں سے حکومتی کشتی ڈوبی تو ہم اس میں سوار نہیں ہونگے، ق لیگ

  

لاہور،سیالکوٹ(آئی این پی) مسلم لیگ (ق) کے سیکرٹری جنرل اور وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ اور مرکزی رہنما و رکن قومی اسمبلی مونس الٰہی نے کہاہے کہ حکومت سے ہمارا بنیادی معاہدہ عوام کو ریلیف دینا ہے، بدترین دشمن بھی ہمارے دور کی تعریف کرتے ہیں، حکومت معاہدوں پر عمل کرے، مہنگائی کا جن بے قابو ہو چکا، معاملات درست کیے جائیں،حکومت کے اتحادی ہیں، کشتی ڈوبی تو ان کے غلط فیصلوں کے باعث ڈوبے گی۔ وہ گزشتہ روزسیالکوٹ میں سینئر نائب صدر چودھری سلیم بریار کی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔ طارق بشیر چیمہ نے کہا کہ ہم ساری زندگی پارلیمنٹ کا حصہ رہے ہیں ایک دوسرے سے ملتے رہتے ہیں۔ ہم حکومت کے اتحادی ہیں کسی بھی فیصلے کیلئے اپنی پارٹی سے رجوع کریں گے۔ تحریک انصاف ایک بڑی پارٹی ہے، حکومت کو ہمارا مشورہ ہے کہ معاملات درست کر لیں، اشیائے خورونوش کی قیمتوں کو حکومت ہی کنٹرول کر سکتی ہے۔ہماری پوزیشن واضح ہے دوسرے اتحادی اپنی پوزیشن واضح کریں، حکومت کے اتحادی ہونے کے باعث ہم ایک ہی کشتی پر سوار ہیں، اگر حکومت کی کشتی ڈوبی تو ان کے اپنے غلط فیصلوں کے باعث ڈوبے گی ہم اس میں شامل نہیں ہوں گے۔ مونس الٰہی نے کہا کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا نوٹس لے اور کشمیریوں پر بھارتی فوج کے مظالم روکنے کیلئے میدان میں آئے، بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو ایک بڑی جیل میں تبدیل کر رکھا ہے، نریندر مودی کا مکروہ چہرہ پوری دنیا کے سامنے ہے۔مودی اور بھارتی فوج کشمیریوں کی آزادی کو نہیں روک سکتے، جبر و ستم اور قید و بند کی یہ پابندیاں جلد ختم ہوں گی اور کشمیریوں کو ان کا حق مل کر رہے گا۔

ق لیگ

مزید :

صفحہ اول -