حکومت مسئلہ کشمیر حل کرنے کیلئے عملی اقدامات کرے،طاہر ڈوگر

  حکومت مسئلہ کشمیر حل کرنے کیلئے عملی اقدامات کرے،طاہر ڈوگر

  

لاہور(پ ر) سْنی تحریک کے زیراہتمام”یوم یکجہتی کشمیر“ کے موقع پرلاہور، اسلام آباد،کراچی، حیدرآباد،سکھر، نواب شاہ، گوجرانوالہ، شیخوپورہ، فیصل آباد، ملتان، حافظ آباد،سیالکوٹ،جہلم، کلر سیداں،گجرات، پشاور،کوئٹہ اورمظفرآباد سمیت ملک کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں ریلیاں، کانفرنسیں اور سیمینارز منعقد کیے گئے،اس موقع پر لاہور پریس کلب سے پنجاب اسمبلی تک بہت بڑی ریلی نکالی گئی، ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ڈویژنل صدر سردار محمد طاہر ڈوگر نے کہاکہ کشمیر کے بغیر پاکستان ادھورا ہے۔پاکستان کی تکمیل کیلئے کشمیر کی آزادی زندگی اور موت کا مسئلہ ہے،حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے عملی اقدامات کرے، پاکستان کے تمام سفارتخانوں میں کشمیر ڈیسک قائم کیے جائیں اورمسئلہ کشمیر کے حل کے لیے سفارتی کوششیں مزید تیز کی جائیں،کسی اہل شخصیت کو کشمیر کمیٹی کا چیئرمین بنایا جائے،کشمیر کی آزادی کی راہ میں اقوام متحدہ کا اسلام دشمن رویہ سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ فلسطین اور کشمیر میں لاکھوں مسلمان ذبح کیے جارہے ہیں اور ان کی آواز پر کان تک نہیں دھرا گیا۔عالمی برادری تعصب اور دوہرے معیارکو چھوڑکر کشمیر کے ڈیڑھ کروڑسے زائد انسانوں کا مسئلہ حل کرائے وگرنہ فلسطین اور کشمیر کے حل طلب مسائل پوری دنیا میں بدامنی اور عدم استحکام کا ذریعہ بنے رہیں گے، جنوبی ایشیاء میں قیام امن کیلئے ضروری ہے کہ دوایٹمی قوتوں کے درمیان کشمیر کے تنازع کا فوری طور پر پائیدار حل تلاش کیا جائے اور اقوام متحدہ کشمیر پر اپنی قراردادوں پر عمل درآمد کروائے۔بھارت ایک لاکھ سے زائد کشمیریوں کا قاتل ہے۔ اس موقع پر ضلعی صدر شر یف الدین قذافی،ضلعی صدر علماء بورڈ عبداللہ ثاقب نے کہا کہ بھارت کو دہشت گرد ملک قرار دیا جائے۔ کشمیری عوام نے بھارتی مظالم،بربریت اور ریاستی دہشت گردی کے خلاف قربانیوں کی لازوال داستان رقم کی ہے،ایک لاکھ سے زائد کشمیری نوجوانوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے بھارت اور اقوام عالم کو یہ پیغام دیا ہے کہ وہ بھارت کی غلامی قبول کرنے کی بجائے عزت کی موت کو گلے لگانا اپنے لئے کامیابی سمجھتے ہیں،ریلی کے اختتام پر بھارتی وز یر اعظم نر یندر مودی کا پتلا بھی نظر آتش کیا گیا،ریلی میں اراکین رابطہ کمیٹی محمد عمر قر یشی،افتخارخان، مو لا نا سیف اللہ نقشبندی،مولانا غلام محی الدین جلالی سمیت کارکنان کی بڑی تعداد مو جود تھی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -