کشمیر ایک عالمی متنازعہ مسئلہ ہے،سعادت حسن

کشمیر ایک عالمی متنازعہ مسئلہ ہے،سعادت حسن

  

جندول(نمائندہ پاکستان) جندول ملک کے دیگر حصوں کی طرح لوئر دیر میں بھی گذشتہ روز یوم یکجہتی کشمیر جوش و خروش کے ساتھ منایا گیا۔ اس سلسلہ میں ضلع پیڈکوارٹر تیمرگرہ میں ڈپٹی کمشنر سعادت حسن کی سربراہی میں یکجہتی واک کا اہتمام کیا گیا واک کے دوران پاک فوج کے افسران اور مختلف محکموں کے افسران نے انسانی زنجیر بنا کر کشمیریوں کیساتھ یکجہتی کا اظہار کیا اور بعد ازاں افسران نے مقامی طلبہ کی جانب سے کشمیریوں پر جاری مظالم کے حوالہ سے بنائے جانے والے پینٹنگ کے نمائش میں بھی شرکت کی اور ظلعی اسمبلی حال میں پر وقار تقریب بھی منعقد ہوا۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر سعادت حسین، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اشفاق احمد، ڈی ایچ او ڈاکٹر شوکت علی، اسسٹنٹ کمشنر لعل قلعہ و دیگر افسران تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کشمیرمیں جاری مظالم پر شدید غم و غصہ کا اظہار کیا اور اقوام متحد ہ سے مسئلہ حل کرانے کا مطالبہ کیا گیا۔یوم یکجہتی کشمیر کے حوالہ سے تحصیل ثمرباغ کے انتظامیہ اور تنظیم تاجران نے اسسٹنٹ کمشنر طارق حسین کی سربراہی میں مشترکہ واک کا اہتمام کیا۔ واک کے شرکاء نے کشمیر میں جاری مظالم کے خلاف اور کشمیریوں کے حق میں پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے اس موقع پر ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر یونس خان، میونسپل آفیسر اعزاز اللہ، تنظیم تاجران کے صدر سلیم خان مہمند و دیگر بھی موجود تھے۔واک کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر ثمرباغ جندول طارق حسین کا کہنا تھا کہ کشمیر ایک عالمی تنازعہ ہے اور اقوام متحدہ کا نا مکمل ایجنڈہ ہے انہوں نے کہا کہ مودی سرکار نے کشمیر میں مظالم کا بازار گرم کر رکھا ہے تاہم پاکستان کے عوام کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور انہیں تنہا نہیں چھوڑے گے۔انہوں نے کہا کہ ہم کشمیر کی سرکاری سیاسی و سفارزتی ہمایت جاری رکھے گے انہوں نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا کہ کشمیر میں جاری مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے تحقیقات کرائیں اور مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کے قراردادوں کے مطابق حل کرایا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -