مختلف تنظیموں کا پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

  مختلف تنظیموں کا پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

  

پشاور(سٹی رپورٹر)یوم کشمیر کے دن مختار سٹوڈنٹس آرگنائزیشن نے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے کیلئے پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا اور بھارت کے خلاف شدیدی نعرہ بازی کی جبکہ کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے بھی لگائے مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اتھا رکھے تھے جس پر بھارت کے مظالم اور مقبوضہ کشمیر میں طویل لاک ڈاون کے نعرے درج تھے مظاہرے کی قیادت ایم ایس او کے صوبائی صدر شائق کیانی اور دیگر ساتھیوں نے کی جبکہ مظاہرے میں ٹی این ایف جے خیبرپختونخوا کے صوبائی صدر اللہ نور،آغا عباس کیانی،جی ایس ابو جعفر،کیانی سمیت صوبائی کونسل کے اراکین ایم ایس اور مختار فورس کے رضاکاروں اور علمائے کرام نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔مطاہرے سے مقررین نے خطاب میں کہا کہ کشمیر پاکستان کا اتوٹ انگ ہے اور دنیا کی کوئی طاقت ہم کو کشمیر ی بھائیوں کی مدد سے روک نہیں سکتی۔انہوں نے کہا کہ بھارت کان کھول کر سن لے ہم اس کو ہر صورت کشمیر سے نکال کر ہی دم لیں گے اوراس حوالے سے ہر فورم پر کوششیں جاری رکھیں گے۔انہوں نے کہاکہ ہٹلر مودی نے 194دنوں سے کشمیر کا لاک ڈاون کر کے اسکو بڑی جیل میں تبدیل کیا ہوا مگر پھر بھی کشمیریوں کی عزائم کو کمزور نہ کر سکا۔مقررین نے اعلان کیا کہ مشکل کی اس وقت میں کشمیریوں کیساتھ اور پاک فوج کیساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہے اور کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے ٭ریلو ے پرائم یونین (سی بی اے)پشاور ڈویژن کا کشمیری بھائیوں کے اظہار یکجہتی کے سلسلے میں پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا مطاہرین نے پلے کارڈز اٹھائے کشمیریوں کے حق میں نعرہ بازی کی اور مودی کا پتلا جلا کر بھارت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی جبکہ مظاہرے کی قیادت دویژنل صدر حاجی نقیب اللہ خان،جی ایس انور علی اور دیھر عہدیداران نے کی۔اس موقع پرمظاہرین کا کہنا تھا کہ ہم بھارتکا کشمیر کی جدگانہ حثییت کو ختم کرنے کو مسترد کرتے ہے کیونکہ کشمیر پاکستان کا اتوٹ انگ اور شہ رگ ہے جبکہ کشمیر کیلئے مرنے مٹنے کیلئے ہر دم تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر کا طویل محاصرہ کے بعد بھی بھارت اپنے عزائم میں کامیاب نہ ہوسکا جبکہ کشمیریوں کا خون رنگ ضرور لائے گا۔انہوں نے کہا کہ عالمی برادری بھارت ک مطالم کا نوٹس لیکر کشمیریوں کو ازاد کرادے ٭نیشنل لیبر فیڈریشن خیبر پختونخوا کا کشمیری عوام کی حق خودار اریت کے حصول کیلئے یکجہتی کے سلسلے میں پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جس پر بھارت کے مظالم کے خلاف نعرے درج تھے جبکی کشمیریوں کے حق میں یکجتی کے کلمات درج تھے مظاہر ے کی قیادت صوبائی صدر این ایل ایف طلا محمد،صوبائی جی ایس فلک تاج،حاجی فدا محم،اعجاز اعوان اور این ایل ایف خیبرپختونخوا کے ساتھ ملحقہ یونینز عہدیداران سمیت واپڈا اور حیات آباد انڈسٹریل زون کے عہدیداران و کارکنان نے کثیر تعداد میں شرکت کی مطاہرے سے خطاب میں طلا محمد نے کہا کہ بھارت نے کشمیر میں 185دن سے کارفیو لگا رکھا ہے جو عالمی دنیا کیلئے کسی چیلن سے کم نہیں جبکہ دنیا کے ٹھیکدادر مسلہ کشیر کو حل کرنے میں نا کام ہو چکے ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان کی کمزور خارجہ پالیس کی وجہ سے کشمیر کے مسلہ پر گہرے اثرات مرتب کئے اور خطہ میں اسکی وجہ سے جنگ کے خطرات منڈلا رہے ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر سفراکرای سے نہیں بلکہ جہاد سے ازاد ہوگا یونکہ کشمیر کے متعلق تمام علامی ادارے نہ کام ہو چکے ہے جبک پاکستان کشمیریوں کیساتھ اخری دم تک ساتھ کھڑا ہے اور ازادی لیکر ہی ہم دم لینگے۔انہوں نے پیغام دیا کے خبرپختونخوا کی غیور عوام کشمیریوں کو اکیلے نہیں چھوڑیں گی اور اس سلسلے میں کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے ٭خیبر پراپرٹی ڈیلرایسو سی ایشن نے یوم کشمیر کے موقع پر پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے ہاتھوں می پلے کارڈذ اور بینرزاٹھا رکھت تھے جس پر کشمیری بھائیوں کیساتھ اظہار یکجہتی کے نعرے درج تھے مظاہرے کی قیادت صدر علی جعفر،ی ایس شوکت خان اور دیگر ساتھیوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔مظاہرین نے اس موقع پر کہا کہ کشمیر پاکستان کا اٹوٹ انگ ہے اور بھارت اپنے مظالم سے اسکو پاکستان سے کھبی جدا نہیں کر سکتا۔انہوں نے کہا کہ مودی نے ہٹلر بن کر 185دنوں سے کشمیر میں کارفیوں لگا کر ظلم و ستم کا بازار گرم رکھا ہے جسک دنیا میں کہی مثال نہیں ملتی جبکہ بھارتی مظالم پر علامی دنیا ھس سے مس نہیں ہوتی جو ایک عالمیہ ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر کی ازادی قریب ہے اور وہ دن دور نہیں جب مقبوضہ کشمیر ایک ازاد ملک ہوگا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ کشمیر میں لاک داون کے خاتمہ کیلئے عالمی دنیا موثر اقدامات کریں اور کشمیری بھائیوں کو بھارت کے جبر سے ازادی دلوائے بصورت دیگر کشمیر کی ازادی کیلئے لڑنے مرنے سے گریز نہیں کرینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -