بنوں،ہیلتھ ملازمین اور وزیر اقوام میں رازی نامہ ہوگیا

بنوں،ہیلتھ ملازمین اور وزیر اقوام میں رازی نامہ ہوگیا

  

بنوں (بیورورپورٹ)ہیلتھ ملازمین اور وزیر اقوام میں رازی نامہ ہوگیا جسکے بعد ہیلتھ ملازمین نے ہڑتال ختم کرنے کااعلان کرتے ہوئے او پی ڈی کھولنے کا اعلان کردیا اس سلسلے میں وزیر اقوا،م کے مشران نے سابق ایم پی اے فخراعظم ایڈوکیٹ اور چیف آف بیزن خیل ملک اسحاق خان کی قیادت میں خلیفہ گلنواز میموریل ٹیچنگ ہسپتال میں پختون روایات کے مطابق ننوتے جرگہ کرکے پانچ لاکھ روپے نقد اور دو دنبے جرمانے کے طور پر پیش کئے جسے جرگہ کی حاطر ہیلتھ ملازمین نے معاف کیا جرگہ سے سابق ایم پی اے فخراعظم وزیر،ملک اسحاق خان اور فاروق وزیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایک ہفتہ قبل ہسپتال میں ڈاکٹر کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ غلط فہمی کا نتیجہ تھا یہی وجہ ہے کہ آج وزیر قوم کے مشران ننوتے جرگہ کرکے اس غلطی پر ہیلتھ ملازمین سے معافی مانگتے ہیں ہیلتھ ملازمین ہمارے لئے قابل احترام ہیں اور اور با الخصوص ڈاکٹر ہمارے لئے سب سے زیادہ قابل احترام ہیں ہم قوم کے نوجوانوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ آئندہ بھی ڈاکٹروں کی عزت کریں کیونکہ یہ مٹی وزیر قوم کی نہیں اب گورنمنٹ کی ملکیت ہے اس موقع پرڈی ایم ایس ایڈمن ڈاکٹر صفدر،ڈاکٹر اسرار،ڈاکٹر احمد فراز ودیگر ملازمین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹروں کے ساتھ پیش آنے والا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں لیکن ڈاکٹربڑے دل والے ہوتے ہیں پہلے بھی ہم نے قوم کی غلطیوں کو معاف کیا ہے اب بھی اور آئندہ بھی کریں گے لیکن حکومت کو چاہیئے کہ وہ ایسے واقعات کی صورت میں فوری طور پر کاروائی کریں انہوں نے دبنے اور پانچ لاکھ روپے جرگہ کی حاطر معاف کرتے ہوئے مشران کے ساتھ تحریری معاہدہ کیا کہ آئندہ ڈاکٹروں پر ہاتھ اٹھانے والوں کو دس لاکھ روپے نقد جرمانہ کیا جائیگا کوئی سیاستدان ہسپتال پر سیاست نہیں کریگا بلکہ ہسپتال انتظامیہ کے ساتھ مسائل مذاکرات کے ذریعے حل کریگا اور نہ ہی قوم کی جانب سے مٹی کی ملکیت کا دعویٰ کیا جائیگا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -