سپریم کورٹ نے الہ دین سے متصل اراضی کی منتقلی غیرقانونی قراردے دی

سپریم کورٹ نے الہ دین سے متصل اراضی کی منتقلی غیرقانونی قراردے دی
سپریم کورٹ نے الہ دین سے متصل اراضی کی منتقلی غیرقانونی قراردے دی

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ کراچی رجسٹری نے الہ دین سے متصل اراضی کی منتقلی غیرقانونی قراردے دی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں الہ دین سے متصل زمین پر تعمیرات کے معاملے پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی،چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ بتائیں ،اس زمین کا مالک کون ہے،سرکاری وکیل نے کہا کہ یہ زمین حسین ناصر لوتھاکے نام ہے،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ بتائیں،یہ کس ملک کے شہری ہیں اورزمین کیسے دی گئی،کمشنر کراچی نے کہاکہ تعمیرات روک دی گئی ہیں ،چیف جسٹس نے برہمی کااظہار کرتے ہیں کہ یہ بتائیں ،ایک غیر ملکی کو زمین کس قانون کے تحت دی گئی۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ جب نیلامی ہی نہیں ہوئی توزمین کیسے کسی کو دے دی گئی ؟،کیا کسی اورملک میں آپ کو اس طرح زمین مل سکتی ہے۔عدالت نے زمین کی منتقلی سے متعلق سندھ حکومت کی کارروائی غیر قانونی قراردیدی،عدالت نے الہ دین پارک سے متصل اراضی کی لیز منسوخ کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -