دنیا بھر میں کرونا وائرس زیر بحث لیکن تمام رکاوٹیں پار کرکے چینی لڑکی بھارت پہنچ گئی اور پھرانڈین نوجوان کیساتھ ایسا کام کردکھایا کہ ہرکوئی داد دینے پر مجبور ہوگیا

دنیا بھر میں کرونا وائرس زیر بحث لیکن تمام رکاوٹیں پار کرکے چینی لڑکی بھارت ...
دنیا بھر میں کرونا وائرس زیر بحث لیکن تمام رکاوٹیں پار کرکے چینی لڑکی بھارت پہنچ گئی اور پھرانڈین نوجوان کیساتھ ایسا کام کردکھایا کہ ہرکوئی داد دینے پر مجبور ہوگیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) چین سے پھیلنے والے کورونا وائرس کا خوف دنیا بھر میں موجود ہے۔ لگ بھگ تمام ممالک اپنے شہریوں کو چین جانے سے روک رہے ہیں اور اپنے ہاں چین سے آنے والے لوگوں کے ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں۔ روس سمیت چند ممالک نے تو چین کے ساتھ فضائی و زمینی رابطہ ہی ختم کر دیا ہے۔ ایسے میں ایک چینی لڑکی تمام رکاوٹیں عبور کرکے بھارت پہنچ گئی اور ایک بھارتی نوجوان کے ساتھ رشتہ ازدواج میں بندھ گئی۔

گلف نیوز کے مطابق اس لڑکی کا نام جیاﺅ وینگ ہے جو چین کے دارالحکومت بیجنگ کی رہائشی ہے۔ اسے بھارتی ریاست مدھیاپردیش کے شہر مندسور کے رہائشی ستیارتھ مشرا کے ساتھ محبت ہوئی۔ جیاﺅ اور ستیارتھ چین میں ایک ہی یونیورسٹی میں زیرتعلیم رہے۔ وہیں انہیں ایک دوسرے سے محبت ہوئی اور دونوں نے اپنے خاندانوں کی مرضی سے شادی کا فیصلہ کیا۔ کورونا وائرس کی وجہ سے جیاﺅ کی فیملی کا کہنا تھا کہ شادی چند ماہ کے لیے مو¿خر کر دی جائے لیکن جیاﺅ اور ستیارتھ نے مقررہ وقت پر ہی شادی کا فیصلہ کیا۔

رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے جیاﺅ کے فیملی کے صرف 5افراد کو بھارت کا ویزہ مل سکا جنہوں نے جیاﺅ اور ستیارتھ کی شادی میں شرکت کی۔ رپورٹ کے مطابق جیاﺅ اور اس کا خاندان جب بھارت پہنچا تو بھارتی حکام نے انہیں دو ہفتے کے لیے الگ رکھا تاکہ اگر ان میں وائرس ہو تو پتا چل جائے۔ جب ان میں سے کسی میں بھی وائرس کی تصدیق نہ ہوئی تو انہیں مندسور جانے کی اجازت دے دی گئی۔

مزید :

بین الاقوامی -