کرونا وائرس،10دن سے شدید سرد موسم میں بھی اپنے فرائض کی ادائیگی میں مصروف چینی ڈاکٹر بھی چل بسا

کرونا وائرس،10دن سے شدید سرد موسم میں بھی اپنے فرائض کی ادائیگی میں مصروف ...
کرونا وائرس،10دن سے شدید سرد موسم میں بھی اپنے فرائض کی ادائیگی میں مصروف چینی ڈاکٹر بھی چل بسا

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) چین کے صوبے ہنان میں کورونا وائرس پھیلنے کے بعد سے وہاں طبی عملہ محاذ سنبھالے ہوئے ہے اور پوری تندہی سے کام کر رہا ہے۔اب وہاں سے ایک ڈاکٹر کی موت کی بھی افسوسناک خبر آ گئی ہے جو اس شدید سرد موسم میں مسلسل ڈیوٹی کے فرائض سرانجام دے رہا تھا۔ میل آن لائن کے مطابق اس 27سالہ ڈاکٹر کا نام سونگ ینگ ژی بتایا گیا ہے جو دس دن سے بہت کم آرام کر رہا تھا۔ اس کی ڈیوٹی ہنان میں سڑک پر گاڑیوں میں آتے جاتے لوگوں کے جسم کا ٹیمپریچر چیک کرنے پر تھی۔

بتایا گیا ہے کہ ڈاکٹر سونگ کی موت کورونا وائرس کی وجہ سے نہیں بلکہ طویل کام کے باعث ہارٹ اٹیک آنے کی وجہ سے ہوئی۔ رپورٹ کے مطابق دنیا بھر کے لوگ سوشل میڈیا پر اس نوجوان ڈاکٹر کو ہیرو قرار دے رہے ہیں جس نے کورونا وائرس کے خلاف جنگ لڑتے ہوئے جان دے دی۔ واضح رہے کہ چین میں کورونا وائرس کے باعث ہونے والی اموات 493ہو گئیں ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -