احسان اللہ احسان کے مبینہ فرار پر پاک فوج نے ایسا جواب دے دیا کہ کوئی تصور بھی نہ کر سکے گا

احسان اللہ احسان کے مبینہ فرار پر پاک فوج نے ایسا جواب دے دیا کہ کوئی تصور ...
 احسان اللہ احسان کے مبینہ فرار پر پاک فوج نے ایسا جواب دے دیا کہ کوئی تصور بھی نہ کر سکے گا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)کالعدم  تحریک طالبان پاکستان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کے مبینہ فرار پر پاک فوج نے ایسا جواب دے دیا کہ کوئی تصور بھی نہ کر سکے گا ۔

برطانوی خبررساں ادارے’’بی بی سی اردو ‘‘کے مطابق کالعدم  تحریک طالبان پاکستان کےسابق ترجمان احسان اللہ احسان کے مبینہ فرار اور سوشل میڈیا پر آڈیو پیغام کے وائرل ہونے کے بعد تاحال آزاد ذرائع سے اس بات کی تصدیق نہیں ہو سکی کہ آڈیو میں آواز احسان اللہ احسان کی ہے یا نہیں؟تاہم بی بی سی کا کہنا ہے اس حوالے سے جب پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ سے رابطہ کیا گیا  تو فوجی ذرائع نے اس دعویٰ کی تصدیق یا تردید نہیں کی اور کہا کہ وہ ابھی اس بارے میں کچھ نہیں کہنا چاہتے۔برطانوی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ گذشتہ ماہ انڈین اخبار ’سنڈے گارجئین‘ نے بھی یہی خبر شائع کی تھی تاہم سرکاری حکام نے احسان اللہ احسان  کے مبینہ فرار کے حوالے کسی قسم کی کوئی تردید یا تصدیق نہیں کی تھی۔

واضح رہے کہ کالعدم تنظیم کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان  کا ایک آڈیو پیغام سوشل میڈیا پر گردش کر رہا ہے جس پر ملک کے معروف صحافیوں نے شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے ۔اپنے مبینہ آڈیو پیغام میں احسان اللہ احسان کا کہنا تھا کہ اس نے پانچ فروری 2017 کو ایک معاہدے کے بعدخود کو پاکستان کے خفیہ اداروں کے حوالےکردیا تھا،اُنھوں نے تین برسوں تک اس معاہدے کی پاسداری کی لیکن سیکیورٹی اداروں نے انھیں بیوی بچوں سمیت قید کر لیا تھا،ان تین برسوں میں پاکستانی فوج نے کئےگئےوعدے پورے نہیں کیےاور معاہدے کی خلاف ورزی کی، جس کے بعد وہ اپنی رہائی کے منصوبے پر کام کرنے کے لیے مجبور ہوئے اور گذشتہ ماہ 11جنوری کوفرارہونے میں کامیاب ہوئے۔احسان اللہ احسان کا کہناتھاکہ وہ پاکستانی اداروں،فوج ،اپنی گرفتاری اور فرار کے بارے میں مزید تفصیلات بعد میں دیں گے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -