اگر کورونا کے کسی مریض کو دل کا دورہ پڑجائے تو۔۔۔؟ نئی تحقیق میں سائنسدانوں کا پریشان کن انکشاف

اگر کورونا کے کسی مریض کو دل کا دورہ پڑجائے تو۔۔۔؟ نئی تحقیق میں سائنسدانوں ...
اگر کورونا کے کسی مریض کو دل کا دورہ پڑجائے تو۔۔۔؟ نئی تحقیق میں سائنسدانوں کا پریشان کن انکشاف
سورس: File/Pixabay

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایک نئی تحقیق میں سائنسدانوں نے انکشاف کیا ہے کہ کورونا کے مریضوں کو اگر دل کا دورہ پڑجائے تو ان کی موت کے چانسز بہت زیادہ بڑھ جاتے ہیں۔ کورونا کی خواتین مریضوں کو اگر دل کا دورہ پڑے تو ان میں موت کا خطرہ مردوں کی نسبت نو گنا زیادہ ہوتا ہے۔

یورپین ہارٹ جرنل میں شائع ہونے والی تحقیق میں سویڈن کے ان 1946 لوگوں کی صحت کا جائزہ لیا گیا جنہیں ہسپتال سے باہر دل کا دورہ پڑا جبکہ 1080 ایسے افراد بھی اس تحقیق میں شامل تھے جنہیں ہسپتال میں ہی دل کا دورہ پڑا۔

یکم جنوری سے 20 جولائی 2020 کے دوران ہونے والی اس تحقیق میں یہ سامنے آیا کہ جن لوگوں کو گھر میں دل کا دورہ پڑا ان میں سے 10 فیصد جبکہ ہسپتال والوں میں سے 16 فیصد کو کورونا تھا۔

گھر پر دل کے عارضے میں مبتلا ہونے والے کورونا کے مریضوں میں 3.4 گنا جبکہ ہسپتال میں موجود مریضوں میں 30 روز کے اندر موت کے خطرے میں 2.3 گنا اضافہ ہوا۔

تحقیق شائع کرنے والے ڈاکٹر پدرام سلطانین کا کہنا ہے کہ ہارٹ اٹیک اور کورونا وائرس انتہائی زہریلا ملاپ ہے، کورونا کے علاج کے دوران ڈاکٹرز کو مریضوں کی دل کی صحت پر بھی خصوصی نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -کورونا وائرس -