سرکاری ہسپتال کے عملے کی نااہلی، خاتون نے کھلے میدان میں بچے کو جنم دیدیا

سرکاری ہسپتال کے عملے کی نااہلی، خاتون نے کھلے میدان میں بچے کو جنم دیدیا
سرکاری ہسپتال کے عملے کی نااہلی، خاتون نے کھلے میدان میں بچے کو جنم دیدیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) سندھ کے پسماندہ ضلع تھرپارکر میں سرکاری ہسپتال کے عملے کی بے حسی کے باعث حاملہ خاتون نے کھلے میدان میں بچے کو جنم دے دیا ہے، خرم شیر زمان نے سوشل میڈیا پر سندھ سرکار کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔

تفصیلات کےمطابق پاکستان تحریک انصاف کےرکن سندھ اسمبلی خرم شیرزمان نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر تھرپارکر کے علاقے چیلہار میں انسانیت سوز واقعے کی ویڈیو شیئر کی ہے۔خرم شیر زمان کے مطابق چیلہار میں حاملہ خاتون کو  سرکاری ہسپتال سے باہر نکال دیا گیا، خاتون نے ہسپتال کے میدان میں بچے کو جنم دیا۔ پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان نے اپنے ٹوئٹ میں طنزیہ انداز اختیار کرتے ہوئے کہا کہ لاشوں کے لیے ایمبولینس نہیں،حاملہ خواتین کی ہسپتال میں بندش ہے، خود بیمارہوں تو ماہر ڈاکٹروں کی ٹیمیں گھربلالیتے ہیں۔

خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ سندھ کے ظالم حکمران منصوبوں پر اپنے خاندانوں کے نام لگاتے ہیں جبکہ سندھ کے حکمران سسکتی،تڑپتی عوام کامذاق اڑارہے ہیں، سندھ کوذاتی جاگیر سمجھ کرٹین پرسنٹ کے پیروکاروں نیلوٹا۔ اپنے سلسلہ وار ٹوئٹس میں خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ وفاق آئینی آپشنز استعمال کرکے سندھ کی ظالم حکومت سے جان چھڑائے، افسوسناک واقعے پر صوبائی وزیر صحت استعفی دیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -