کشمیر کے حوالے سے انڈیا سے مذاکرات کس صورت میں ہونگے؟ڈاکٹر معید یوسف نے بتادیا

کشمیر کے حوالے سے انڈیا سے مذاکرات کس صورت میں ہونگے؟ڈاکٹر معید یوسف نے ...
کشمیر کے حوالے سے انڈیا سے مذاکرات کس صورت میں ہونگے؟ڈاکٹر معید یوسف نے بتادیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)معاون خصوصی برائے قومی سلامتی  ڈاکٹر معید یوسف نے کہا ہے کہ انڈیا کو کشمیر کا محاصرہ ختم کرنا ہوگاجس کے بعد ہی مذاکرات ہوسکتے ہیں۔

جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ گللگت بلتستان کے لوگ پاکستان میں شامل ہونا چاہتے ہیں،یہی خیالات کشمیر کے لوگوں کے بھی ہیں۔بھارت پانچ اگست کے اقدام کے بعد  جموں کشمیر میں پھنس چکا ہے۔انڈیا اس وجہ ان قراردادوں کو نہیں مان رہا کیونکہ اس  کو پتہ ہے کہ لوگوں کا فیصلہ کیا ہوگا۔ انڈیا کو نظر آرہا ہے کہ وہ دلدل  میں پھنسا ہوا ہے،اسی وجہ سے کشمیر میں انٹرنیٹ سروس بحال کی جارہی ہے۔کشمیر کے مسئلے کا حل ایک دو روز میں ممکن نہیں ہے،انڈیا سےاس وقت  کسی قسم کے مذاکرات نہیں ہورہے۔

معید یوسف کا کہنا تھا کہ یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر حریت کشمیر کے لوگوں سے بات ہوئی وہ عمران خان کی اقوام متحدہ میں تقریر سمیت دیگر تمام اقدامات سے خوش ہیں،حریت کے لوگوں کا کہنا تھا کہ جب پاکستان میں کسی چینل پر کشمیر کے حوالے سے انٹرویو جاری ہوتا ہے تو وہاں خوشی کی لہر دوڑ جاتی ہے۔ ہماری جانب سے  کشمیر کے مسئلے پر کوئی پالیسی کی تبدیلی نہیں ہے،کشمیر کا معاملہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ہوگا۔

مزید :

قومی -