سینیٹ الیکشن صدارتی آرڈیننس ،مسلم لیگ (ن) بھی کھل کر میدان میں آگئی 

سینیٹ الیکشن صدارتی آرڈیننس ،مسلم لیگ (ن) بھی کھل کر میدان میں آگئی 
سینیٹ الیکشن صدارتی آرڈیننس ،مسلم لیگ (ن) بھی کھل کر میدان میں آگئی 

  

 اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی جانب سے الیکشن ترمیمی آرڈیننس2021ء جاری ہونے پر ملک میں اپوزیشن کی سب سے بڑی جماعت پاکستان مسلم لیگ ن حکومتی اقدام کےخلاف کھل کر میدان میں آ گئی ہے، ن لیگ کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال نےکہاہے کہ حکومت آرڈیننس لا کر سپریم کورٹ کو دباؤ ڈال رہی ہے کہ ہم نے صدارتی آرڈیننس جاری کر دیا ہے اس لئے آپ ہمارے حق میں فیصلہ دیں۔

تفصیلات کےمطابق  نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا  کہ سینیٹ الیکشنزکے ایکٹ میں  ترمیم  جیسے   صدارتی آرڈیننس جاری کرکے آئین کے ساتھ مذاق کیا گیا ہے،حکومت نے ملک میں انتظامی انار کی  تو پھیلا رکھی تھی اب یہ ملک کو آئینی انار کی کی طرف لے کر جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے اسی لئے آئینی ترمیمی بل اسمبلی میں پیش کیا تھا کہ وہاں حکومت کامیاب نہیں ہوئی تو یہ آئینی ترمیمی صدارتی آرڈیننس جاری کیا گیا،حکومت نے آرڈیننس کے ذریعے سپریم کورٹ کو الجھا لیا ہے،حکومت آرڈیننس لا کر سپریم کورٹ کو دباؤ ڈال رہی ہے کہ ہم نے صدارتی آرڈیننس جاری کر دیا ہے اس لئے آپ ہمارے حق میں فیصلہ دیں۔

احسن اقبال نے کہا کہ یہ صدر کی مسلسل تیسری نااہلی ہے،پہلے الیکشن کمیشن کے ممبران کے تعین کے لئے آئینی طریقے کی خلاف ورزی کی گئی،قانون کے خلاف  سپریم کورٹ کے جج کے خلاف ریفرنس بھیجا گیا، اب یہ آئینی ترمیمی آرڈینس جو دنیا کی تاریخ میں ایک لطیفے کے طور پر لکھا جائے گا۔ 

واضح رہے کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے الیکشن ترمیمی آرڈیننس2021ء جاری کردیا  ہے، آرڈیننس کے تحت سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ کے ذریعے ہو سکیں گے،آرڈیننس فوری طورپرنافذالعمل ہو گا، آرڈیننس کو سپریم کورٹ کی صدارتی ریفرنس پر رائے سے مشروط کیا گیا ہے۔

آرڈیننس کے مطابق سپریم کورٹ سے سینیٹ الیکشن آئین کی شق 226 کے مطابق رائے ہوئی تو سیکرٹ ووٹنگ ہوگی، سپریم کورٹ نے اگر سینیٹ الیکشن کو الیکشن ایکٹ کے تحت قرار دیا تو اوپن ووٹنگ ہوگی۔آرڈیننس کے تحت الیکشن ایکٹ 2017ءکی شق122میں ترمیم کی گئی ہے، آرڈیننس کے تحت پارٹی سربراہ ووٹ دکھانے کی درخواست کرسکے گا، الیکشن کمیشن پارٹی سربراہ یا اس کے نمائندے کوووٹ دکھانے کا پابند ہوگا۔

مزید :

قومی -