شہباز شریف کا مجھے عدالتوں میں گھسیٹنے کا وعدہ پورا نہیں ہوا ، شہزاد اکبر نے ن لیگی صدر  کو پرانا وعدہ یاد کرا دیا 

شہباز شریف کا مجھے عدالتوں میں گھسیٹنے کا وعدہ پورا نہیں ہوا ، شہزاد اکبر نے ...
شہباز شریف کا مجھے عدالتوں میں گھسیٹنے کا وعدہ پورا نہیں ہوا ، شہزاد اکبر نے ن لیگی صدر  کو پرانا وعدہ یاد کرا دیا 

  

 اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب بیرسٹرشہزاد اکبر نے کہا ہے کہ  ڈیلی  میل کیس میں برطانوی عدالت میں ٹرائل میں فریق بن سکتا ہوں ، شہبازشریف کے خلاف ثبوت بھی پیش کر سکتا ہوں، میں اپنے دعوے پر قائم ہوں ،شہباز شریف کو لندن میں بھی جھوٹا ثابت کرنا پڑا تو لندن جاؤنگا، شہباز شریف نے کہا تھا کہ مجھے عدالتوں میں گھسیٹیں گے اب تک ان کا وعدہ پورا نہیں ہوا۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر شہزاد اکبر مرزا نے کہا کہ آئینی ترمیم اپوزیشن کی معاونت کے بغیر نہیں ہو سکتی، اپوزیشن کتنی معاون ہے سب نے دیکھ لیا ہے،اپوزیشن جماعتیں بھی مانتی ہیں کہ سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ ہوتی ہے، حکومت چاہتی ہے کہ انتخابات شفاف طریقے سے اوپن بیلٹ سے ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اگلے ہفتے سینیٹ الیکشن کے شیڈول کا اعلان ہو جائے گا ایک بار شیڈول کا اعلان ہو جائے تو پھر آئین میں تبدیلی نہیں لائی جا سکتی،اس لئے صدارتی آرڈیننس لا ئے، یہ آرڈیننس سپریم کورٹ کے سامنے بھی جائے گا۔

معاون خصوصی برائے احتساب نے کہا کہ برطانوی عدالت کا ابھی تحریری حکم نہیں آیا یہ صرف زبانی حکم نامہ ہے،ابھی یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ مقدمے کا فیصلہ کس کے حق اور کس کے خلاف ہے؟ کیس جب ٹرائل میں جائے گا تو شواہد پیش ہونگے، یہ لیول ون کی نہیں یہ اس سے اوپر کی بھی ہتک عزت ہے، مریم صفدر، مریم اورنگزیب نے تو کل کی سماعت کے حوالے سے شہباز شریف کو بے گناہ بنا کر پیش کیا۔

مزید :

قومی -