’’خدمت کارڈ‘‘ ۔۔۔خصوصی افراد کی مالی معاونت کا عظیم پروگرام

’’خدمت کارڈ‘‘ ۔۔۔خصوصی افراد کی مالی معاونت کا عظیم پروگرام
 ’’خدمت کارڈ‘‘ ۔۔۔خصوصی افراد کی مالی معاونت کا عظیم پروگرام

  

آج کے دور میں ہر فرد ملت کے مقدر کا ستارہ ہے یہ بات سائنسی طور پر ثابت ہو چکی ہے کہ سپیشل افراد کو اللہ تعالی اگر کسی چیز سے محروم کرتا ہے تو اس کے بدلے میں ان کی ذہانت اور استعداد میں اضافہ فرما دیتا ہے ۔معاشرے کے خصوصی افراد کی معذوری و محرومی کے حوالے سے عام لوگوں کو یہ احساس دلانا ضروری ہے کہ خصوصی افراد اپنے جسمانی نقائص کے باوجود بھر پور صلاحیت کے حامل ہیں اور معاشرے کو انہیں معاشی ،سیاسی اور ثقافتی میدان میں اپنا کردار ادا کرنے کا موقع دینا چاہیے۔کوئی معاشرہ اس وقت تک ترقی کی منازل ھے نہیں کر سکتا جب تک وہ کمزور اور محروم طبقوں کو زندگی کی دوڑ میں شامل ہونے کا موقع فراہم نہیں کرتا۔حکومت اور معاشرے کا فرض ہے کہ وہ ان طبقوں اور خصوصی بچوں کو زندگی کی ڈور میں شامل کرنے کے لئے اپنا اپنا کردار ادا کریں۔پنجاب حکومت نے مستحق خصوصی افراد کی مالی معاونت، بحالی و فلاح، مفت فنی تربیت اور بلاسود قرضوں کی فراہمی کے لئے پاکستان کی تاریخ میں اپنی نوعیت کے پہلے اور منفرد پروگرام ’’پنجاب خدمت کارڈ ‘‘ کا اجراء کر دیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے پنجاب خدمت کارڈکی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صوبے بھر میں خصوصی افراد کو معاشرے کا فعال اور مفیدرکن بنانے کے لئے پنجاب خدمت کارڈ پروگرام کا آغاز کر دیا گیا ہے اور یہ پروگرام پورے پنجاب میں شروع کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خصوصی افراد بھی عام شہریوں کی طرح عظیم پاکستانی ہیں اور ان کے دل میں بھی وطن کی تڑپ اور معاشرے پر بوجھ بننے کی بجائے اس کا بوجھ بانٹنے کا جذبہ اور لگن موجود ہے۔خصوصی افراد معاشرے کا اہم حصہ ہیں اور ان کی معاونت کرنا معاشرے اور ریاست کا فرض ہے اور اسی عظیم مقصد کو پیش نظر رکھ کر پنجاب بھر میں خدمت کارڈ پروگرام کا آغاز کیا گیا ہے۔ خصوصی افراد کو اگر تکنیکی، فنی اور ووکیشنل تربیت سے آراستہ کیا جائے تو وہ معاشرے کے لئے کارآمد اور مفید ثابت ہو سکتے ہیں اور معاشرے کے دکھ درد بانٹنے میں اپنا حصہ ڈال سکتے ہیں۔ پنجاب خدمت کارڈ پروگرام کے پہلے مرحلے کے لئے 2 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں اور اس پروگرام سے صوبے بھر کے 2 لاکھ مستحق خصوصی افراد مستفید ہوں گے۔ پروگرام کے تحت مستحق خصوصی افراد کو 3600 روپے سہ ماہی دیئے جائیں گے اور رقوم کی ادائیگی کے لئے ایسا باوقار طریقہ کار اختیار کیا گیا ہے جس سے ان کی عزت نفس مجروح نہ ہو۔

مستحق خصوصی افراد بینک آف پنجاب کی شاخوں یا اے ٹی ایم مشینوں سے رقوم حاصل کر سکیں گے۔ اس پروگرام کا آغاز پنجاب کے 9 ڈویژن اور 36 اضلاع میں بیک وقت کر دیا گیا ہے اور اس پروگرام کے ذریعے نہایت شفاف طریقے سے خصوصی افراد کی مالی معاونت کی جائے گی۔ مستحق خصوصی افراد کو خدمت کارڈ کے ذریعے مالی امداد کی ادائیگی کے لئے اضلاع کی سطح پر کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی ہیں اور یہ تمام عمل انتہائی شفاف انداز میں ہوگا جس کی مکمل مانیٹرنگ کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ پنجاب خدمت کارڈ پروگرام کے ذریعے ہم خدانخواستہ ہاتھ پھیلانے والوں کی فوج ظفر موج تیار نہیں کر رہے بلکہ اس پروگرام کے ذریعے خصوصی افراد کی مالی معاونت اور فنی تربیت کے ذریعے انہیں اپنے پاؤں پر کھڑا کریں گے تاکہ وہ اپنے لئے روزگار کما سکیں جس سے ان کی عزت و توقیر میں بھی اضافہ ہوگا اور وہ عملی طور پر معاشرے کی تعمیر و ترقی میں اپنا حصہ ڈالیں گے، پنجاب خدمت کارڈ کے ذریعے خصوصی افراد کا پورا خیال رکھا جائے گا اور انہیں اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کے لئے ہرممکن تعاون اور اقدامات کررہے ہیں۔ پنجاب حکومت ان خصوصی بچوں کی بحالی کے لئے نا صرف کوشاں ہے بلکہ ان کو روز گار کے مواقع بھی فراہم کرنے اور اپنا کاروبار شروع کرنے کے لئے بلاسود قرضے بھی فراہم کر رہی ہے ۔پنجاب حکومت خصوصی بچوں کے لئے بھر پور اقدامات کر رہی ہے وہ نہ صرف قابل تعریف ہیں بلکہ قابل ستائش بھی ہیں اور دوسرے صوبوں کو بھی چاہیے کہ وہ حکومت پنجاب کی طرح اپنے خصوصی افراد کی بحالی اورانہیں معاشرے کے مفید شہری بنانے کے لئے اقدامات کریں۔

مزید :

کالم -