بیت المقدس میدان جنگ بن گیا، 40فلسطینی زخمی

بیت المقدس میدان جنگ بن گیا، 40فلسطینی زخمی

  

مقبوضہ بیت المقدس( اے این این )فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس شہر کی مختلف کالونیوں میں اسرائیلی فوج کی پرتشدد کارروائیوں کے نتیجے میں درجنوں فلسطینی زخمی ٗقابض فوجیوں نے تلاشی کی آڑ میں گھروں میں گھس کر خواتین اور بچوں کو زدو کوب کیا ٗ قیمتی سامان کی توڑپھوڑ کی ٗ نقدی اور زیورات لوٹ لئے ٗ صہیونی فوجیوں نے پستول رکھنے کے الزام میں بھی ایک شہری کو حراست میں بھی لے لیا۔مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق بیت المقدس میں فلسطینیوں اور اسرائیلی فورسز کے درمیان جھڑپیں ا وقت شروع ہوئیںّ جب اسرائیلی فوج کے مسلح دستوں نے مشرقی بیت المقدس میں عیساویہ کے مقام پر لوگوں کے گھروں میں گھس کر توہین آمیز انداز میں شہریوں کی تلاشی شروع کی۔ اس پر شہری احتجاج کرتے ہوئے سڑکوں پرنکل آئے۔ مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے قابض فوجیوں نے ان پر دھاتی گولیوں، آنسوگیس کے شیلوں اور فائرنگ کی بوچھاڑ کردی جس کے نتیجے میں کئی افراد زخمی ہوئے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ قابض فوجیوں نے تلاشی کی آڑ میں گھروں میں گھس کر خواتین اور بچوں کو زدو کوب کیا، قیمتی سامان کی توڑپھوڑ کی اور نقدی اور زیورات لوٹ لیے۔قبل ازیں صہیونی فوج کی جانب سے دعوی کیا گیا تھا کہ انہیں کالونی کے ایک مکان سے پستول ملا ہے۔ وہ اس سلسلے میں مزید اسلحہ بھی تلاش کرنا چاہتے ہیں۔ صہیونی فوجیوں نے پستول رکھنے کے الزام میں ایک شہری کو حراست میں بھی لے لیا۔ او ریالہ کالونی میں تلاشی کے دوران داد عطیہ نامی شہری کو حراست میں لے لیا۔ اسرائیلی خفیہ اداروں نے علا نبیل صلاح کا پیچھا کیا جس پراس نے بھی خود کو صہیونی پولیس کے حوالے کردیا۔شمال مغربی بیت المقدس میں قابض صہیونی پولیس اور فلسطینیوں کے درمیان اس وقت جھڑپیں ہوئیں جب صہیونی پولیس اہلکاروں نے شہید فلسطینی احمد جمال طہ کی نماز جنازہ کے جلوس میں شریک شہریوں کو منتشر کرنے کی کوشش کی۔طبی ادارے ہلال احمر فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوجیوں کی براہ راست فائرنگ سے سات، دھاتی گولیوں سے تین اور زہریلی آنسوگیس کی شیلنگ سے 30 فلسطینی زخمی ہوئے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -