پیپلزپارٹی اقتصادی راہداری متنازعہ نہیں بنانا چاہتی ، بلاول بھٹو

پیپلزپارٹی اقتصادی راہداری متنازعہ نہیں بنانا چاہتی ، بلاول بھٹو

  

کراچی(آئی این پی) پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ہماری پارٹی چین پاکستان اقتصادی راہداری کو متنازعہ نہیں بنانا چاہتی، لیکن اس 46 ارب ڈالرز کے میگا منصوبے میں بلوچستان کے حقوق کو یقینی بنایا جائے، وفاقی حکومت اقتصادی منصوبے پر تمام فریقین کو اعتماد میں لے ،پیپلزپارٹی کی حکومت نے 18 ویں ترمیم کے تحت تمام صوبوں کو خودمختیاری دی لیکن موجودہ حکومت صوبوں کو مالی اور دیگر وسائل کی تقسیم کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کر رہی یہ عمل خطرناک ہے ۔ وہ منگل کو یہاں بلاول ہاؤس میں سابق ایم این اے عبدالرؤف کی سربراہی میں بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کررہے تھے ۔وفد میں سابق ایم پی ایز اکبر مینگل، اختر لانگو اور محمد قاسم شامل تھے، اس موقع پر سینیٹر شیری رحمان، سینیٹر یوسف بلوچ اور جمیل سومرو بھی موجود تھے۔ بی این پی ( مینگل) کے وفد نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو پاک چین اکنامک کاریڈور کے روٹس تبدیل کرنے کے حوالے سے بلوچستان کے خدشات کے متعلق آگاہ کیااورچیئرمین پیپلزپارٹی کو 10جنوری کو اسلام آباد میں ’’ چائنا۔پاکستان ایکنامک کاریڈور،گوادر۔بلوچستان کے مستقبل کا منظرنامہ‘‘ کے عنوان تحت ہونے والی آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی جس پر بلاول بھٹو زرداری نے یقین دلایا کہ پیپلزپارٹی اس کانفرنس میں شرکت کرے گی ۔

مزید :

صفحہ اول -