ذوالفقار علی بھٹو کی 88ویں سالگرہ عقیدت واحترام سے منائی گئی

ذوالفقار علی بھٹو کی 88ویں سالگرہ عقیدت واحترام سے منائی گئی

  

اسلام آباد ،کراچی ،لاہور( ایجنسیاں 228نمائندہ خصوصی) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کے سیاسی مشیر جہانگیربدر نے کہا ہے کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو کا فلسفہ آج بھی اتنا ہی موثر ہے جتنا آج سے چالیس پہلے موثر تھا جو لوگ یہ کہتے ہیں کہ ان کا فلسفہ آج موثر نہیں رہا تو جیالے ان سے اتفاق نہیں کرتے ہیں ہم نے بھٹو شہید کی زندگی میں بھی گینگ آف فور کے ٹولے کا مقابلہ کیا تھااب بھی کریں گے بھٹو شہید کے نظریات کو برؤئے کار لانے کی ضرورت ہے بلاول بھٹو زرداری جب نکلیں گے تو پھر ہر طرف ایک رانجھے جیسے ونجلی بجتی ہوئی دکھائی دے گی اور پیپلز پارٹی ان کے پیچھے دیوانی ہوتی نظر آئے گی پیپلز پارٹی میں کوئی گروپ بندی نہیں ہے ہم سب نے ملکر بھٹو شہید کے نواسے کا ساتھ دینا ہے اور سیاسی معاشی سماجی نظام کی جدوجہد کرنی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلاول ہاؤس لاہور میں پیپلز پارٹی کے بانی چیرمین شہید زوالفقار علی بھٹو کی 88ویں سالگرہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔تقریب سے پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو‘ جنوبی پنجاب کے صدر مخدوم سید احمد محمود ‘ الطاف قریشی ‘ بیگم بیلم حسنین ‘ ثمینہ خالد گھرکی اور عارف خان نے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ جبکہ اس موقع پر بلاول بھٹو زرداری کے سنئیر مشیر بشیر ریاض‘ نوید چودھری‘ میاں محمد ایوب‘ افنان بٹ‘ سہیل ملک‘ حافظ اخلاق احمد خان‘ علامہ محمد یوسف اعوان‘ چودھری منور انجم ‘ اورنگزیب برکی ‘ فیصل میر‘ رانا اشعر نثار‘ زاہد زوالفقار خان‘ اشرف بھٹی ‘ زاہد علی خان ‘ سلیم مغل ‘ راؤ شجاعت علی ‘ بشارت صدیقی ‘ خرم فاروق‘ بشری اعتزاز احسن‘ جہان آراء وٹواور صغیرہ اسلام سمیت دیگر بھی موجود تھے۔ تقریب کے اختتام پر سالگر ہ کا کیک پنڈال میں کاٹنے کی بجائے ایک بند کمرے میں کاٹا گیا اور جیالے کیک کا انتظار ہی کرتے رہ گئے۔

مزید :

صفحہ اول -