سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس ،سماعت کل تک ملتوی ،فرد جرم چیلنج کرنے کی درخواست مسترد

سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس ،سماعت کل تک ملتوی ،فرد جرم چیلنج کرنے کی درخواست مسترد

  

لاہور(نامہ نگار) انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج خواجہ ظفراقبال نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کی سماعت 7جنوری تک ملتوی کردی۔عدالت نے ادارہ منہاج القران کے وکلا کی طرف سے ملزمان پر عائد فرد جرم چیلنج کرنے اور دوبارہ نقول دینے کی درخواست کو مسترد کردیا۔انسداد دہشت گردی کی عدالت میں تھانہ فیصل ٹاؤن پولیس نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کا چالان پیش کررکھا ہے جس میں عامرسلیم انسپکٹر سمیت اڑتالیس ملزمان نامزد ہیں۔ عدالت نے چالان آنے پر ملزمان پرفرد جرم عائد کردی۔ عدالت نے استغاثہ کے گواہوں کوگزشتہ روز طلب کررکھا تھا۔ ادارہ منہاج القران کے وکلاء رائے بشیر احمد اور نعیم محی الدین ایڈووکیٹ نے ملزمان پر عائد فرد جرم کو چیلنج کردیا۔

عدالت میں موقف اختیار کیا گیا کہ ملزمان کو مقدمے کی نقل فراہم نہیں کی گئی،انھیں چالان میں گنہگار لکھا گیا نہ بے گناہ، ،بعض ملزمان وکیل نہیں کرسکے،ایسی صورت میں فردجرم عائد نہیں کی جا سکتی۔

عدالت میں پراسیکیوٹر وقاربھٹی نے بتایا کہ ملزمان کو نقول فراہم کردی گئی ہیں،جن پر ان کے دستخط موجود ہیں، جب ایک بار فرد جرم عائد ہو جائے اس کو تبدیل نہیں کیا جاسکتا۔

عدالت نے فرقین کے دلائل سننے کے بعد رائے بشیر احمد اور نعیم محی الدین نے درخواست کو مسترد کردیا۔ عدالت نے ایسے ملزمان جواپنا وکیل نہیں کرسکتے تھے، ان کو سرکاری خرچے پر وکیل مقرر کردیا۔عدالت نے حکم جاری کیا استغاثہ سات جنوری کو اپنے گواہ پیش کرے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -