اورنج لائن ٹرین منصوبہ لاہور پولیس ضلعی انتظامیہ سے تعاون کرے گی ،کیپٹن امین وینس

اورنج لائن ٹرین منصوبہ لاہور پولیس ضلعی انتظامیہ سے تعاون کرے گی ،کیپٹن ...
 اورنج لائن ٹرین منصوبہ لاہور پولیس ضلعی انتظامیہ سے تعاون کرے گی ،کیپٹن امین وینس

  

 لاہور(کرائم رپورٹر)سی سی پی او لاہور کیپٹن(ر) محمد امین وینس نے کہا ہے کہ اورنج لائن ٹرین منصوبہ کے روٹ پر گھروں اور دکانوں کی منتقلی و دیگر معاملات میں لاہور پولیس ضلعی انتظامیہ کے ساتھ مکمل تعاون کرے گی اور روٹ پر مختلف علاقوں پر منحصر پیکجز پر تعمیر کے وقت ٹریفک کی روانی کو برقرار رکھنے کے لیے جامع ٹریفک پلان ترتیب دیا جائے گا تا کہ شہریوں کو بغیر کسی مشکل کے متبادل راستہ دستیاب ہو سکے۔اورنج لائن ٹرین کے روٹ پر جن گھروں اور دکانوں کے مالکان کو متبادل جگہ یا قیمت ادا کرنی ہو وہ جلد کر دی جائے تا کہ اورنج لائن ٹرین کی تعمیر کے دوران کسی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے گز شتہ روز اپنے دفتر میں اورنج لائن ٹرین پراجیکٹ کے حوالہ سے ضلعی انتظامیہ اور پولیس افسران کے اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ڈی سی او لاہور کیپٹن(ر) محمد عثمان، ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف ، ایس ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک ، تمام ڈویژنل ایس پیز اور اسسٹنٹ کمشنرز بھی موجود تھے۔ڈی سی او لاہور کیپٹن (ر) محمد عثمان نے اس موقع پر کہا کہ ہم نے اورنج لائن ٹرین منصوبہ کے روٹ پر آنے والے تمام گھروں اور دکانوں کی ڈور ناکنگ کر لی ہے اور مالکان سے مل کر معاملات طے کر لیے ہیں۔جن گھروں اور دوکانوں کے مالکان سے معاملات طے نہیں ہوئے ان سے بات چیت کے ذریعے معاملات طے کیے جا رہے ہیں۔ہم نے اورنج لائن ٹرین منصوبہ کے تمام روٹ کی میپنگ کر لی ہے جس میں روٹ پر آنے والے گھروں اور دکانوں کی منتقلی اور رقم کی ادائیگی جلد کر دی جائے گی۔روٹ پر اورنج لائن ٹرین کے ٹریک کی تعمیرتیزی سے جاری ہے اور شہریوں کو جلد جدید اور معیاری سفری سہولت فراہم کر دی جائے گی۔ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے کہا ہے کہ اورنج لائن ٹرین منصوبہ کا روٹ جن ڈویژنز، سرکلز اور تھانوں کی حدود میں آتا ہے وہاں کے ایس پیز، ڈی ایس پیز اور ایس ایچ اوز ضلعی انتظامیہ کے متعلقہ افسران سے مکمل تعاون کریں گے اور لمحہ بہ لمحہ کوارڈینیشن کریں گے۔ ہم چاہتے ہیں کہ اورنج لائن ٹرین منصوبہ کی تعمیر بغیر کسی مشکل کے مکمل ہو جائے۔

مزید :

علاقائی -