ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی سے سعودی سفیر کی ملاقات،دوطرفہ امورپرتبادلہ خیال

ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی سے سعودی سفیر کی ملاقات،دوطرفہ امورپرتبادلہ خیال

  

اسلا م آباد (نمائندہ خصوصی)ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی مرتضی جاوید عباسی نے مسلم امہ کے اتحاد اور مسلم ممالک کے مابین پائے جانے والے تنازعات کو مذاکرات کے ذریعے پر امن طور پر حل کرنے کی ضرورت پر زور دیاہے ۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار آج پاکستان میں تعینات سعودی عرب کے سفیر عبداللہ مرزوق الزہرانی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے آج پارلیمنٹ ہاؤس میں ڈپٹی سپیکر سے ملا قات کی ۔ملا قات میں دوطرفہ تعلقات، مشرق وسطیٰ میں پائے جانے والی کشیدگی اور باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ڈپٹی سپیکر نے کہا کہ اتحاد بین المسلمین وقت کی اہم ضروت ہے اور سعودی عرب کا کرداراس سلسلے میں کلیدی اہمیت کا حامل ہے انہوں نے کہاکہ اسلا م دشمن قوتیں دنیا کے سامنے مسلمانوں کو دہشت گرد اورانتہا پسند بنا کر پیش کر رہی ہیں جس کی بڑی وجہ فر قہ واریت اور اسلا می ممالک کے مابین پائے جانے والے تنازعات ہیں۔ ڈپٹی سپیکر نے کہا کہ پاکستان کی حکومت، پارلیمنٹ اور عوام میں سعودی عرب اور ایران کے درمیان پائے جانے والی کشیدگی پر گہری تشویش پائی جاتی ہے ۔ انہوں ں نے کہا کہ پاکستان مشرق وسطیٰ میں پائی جانے والی کشیدگی کا سفارتی ذرائع اور مذکرات کے ذریعے فوری طور پرپر امن حل چاہتا ہے ۔انہوں نے اس سلسلے میں پاکستان کے بھر پور کردار کی یقین دہانی کرائی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ اپنے تعلقات کو بڑی قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے اورپارلیمانی واقتصادی روابط کو فروغ دے کر انہیں مزید وسعت دینا چاہتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک مذہب ، اخوت ، تاریخ اور ثقافت کے لازوال رشتوں میں بندھے ہوئے ہیں۔ اور دونوں ممالک اہم عالمی اور علاقائی معاملات پر یکساں موقف رکھتے ہیں۔انہوں نے سعودی عرب کی طر ف سے اہم علا قائی اور عالمی فورمز پر پاکستان کے موقف کی حمایت پر شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے سعودی عرب کی طرف سے ہر مشکل وقت میں پاکستان کی فراخدلانہ امداد کو سراہا ۔ انہوں نے دوطرفہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کے لیے دونوں ممالک کے پارلیمانوں کے مابین رابطوں میں اضافوں کی ضرورت پر زور دیا۔ سعودی عرب کے سفیر Mr. Abdullah Marzouk Al-Zahraniنے سعودی عرب کے لیے ڈپٹی سپیکر کے تاثرات کو سراہتے ہوئے کہاکہ سعودی عرب پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہیں اور انہیں مزید فروغ دینے کا خواہاں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت تمام مسلم ممالک خصوصاً ہمسایہ ممالک کے ساتھ دوستانہ اور خوشگوار تعلقات چاہتی ہے اور تمام تنازعات کو پر امن حل کرنے پر یقین رکھتی ہے ۔ انہوں نے سعودی عرب اور ایران کے مابین بڑھتی ہوئی کشیدگی پر اپنی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب نے ہمیشہ دوسر ے ممالک کے معاملات میں عدم مداخلت کی پالیسی پر عمل کیا ہے اور وہ دوست ممالک کی طرف سے اس کشیدگی کے خاتمے کے لیے کی جانے والی کوششوں کا خیر مقدم کرے گا ۔انہوں نے اس بات سے اتفاق کیا کہ اتحادبین المسلمین مسلم امہ اور اسلا م کے خلاف پائے جانے والے منفی تاثرکے خاتمے کے لیے اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سعودی عرب اور سعودی شوریٰ دوطر فہ تعلقات کو فروغ دینے کے لیے حکومت اورپاکستان کی پارلیمنٹ کے ساتھ تعاون کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں ۔انہوں نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ دونوں ممالک کے ارکان پارلیمنٹ کے مابین رابطوں میں اضافے سے دوطر فہ تعلقات مزید مستحکم ہونگے ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -