نوشہرہ ،شاعر رحیم خان اورساتھیوں کیخلاف کیس کی سماعت 12 جنوری کو ہوگی

نوشہرہ ،شاعر رحیم خان اورساتھیوں کیخلاف کیس کی سماعت 12 جنوری کو ہوگی

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ)ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نوشہرہ عبدالجبارخان کی عدالت نے شاعر رحیم خان اور اس کے تین ساتھیوں کے خلاف مقدمے کی سماعت بارہ جنوری کوہوگی۔ عدالت نے فریقین کونوٹس جاری کردئیے جبکہ ایف ائی اے سابئر کرایم نے فیس بک پر شرانگیز اورمضحکہ خیز اور اخلاقیات سے گری ہوئی منظم کلام اور دیگر الزامات کے تحت تحقیقات شروع کردی۔ تمام شواہد ایف ائی اے سائبر کرائم سیل کے حوالے کردئیے گئے جبکہ ڈی پی او نوشہرہ نے نوشہر ہ پریس کلب کی جنر ل باڈی کی تحریری شکایات ڈائریکٹر ایف ائی اے خیبرپختونخوا کو بھجوادی ۔ تفصیلات کے مطابق نوشہرہ پریس کلب کی جنرل باڈی نے ڈسٹرکٹ پولیس افیسر نوشہرہ واحد محمود کو شاعر رحیم خان، باچا خان گل ثمر شاہ اور آواز حق کے نام سے فیس بک پر پریس کلب کے صدر اور سینر صحافی مشتاق پراچہ کے خلاف غلط بے بیناد الزامات اور اخلاق سے گری ہوئی الزامات فیس بک پر ڈالنے مشتاق پراچہ کے نام سے جعلی ائی ڈی بنانے کے خلاف قانونی چارہ جوئی کے لیے تحریری درخواست دی اوران سے تفصیلی ملاقات میں ان کوتمام باتوں سے اگاہ کیا اور ان کو سی ڈی میں تمام شواہد حوالے کردیئے۔ جس پر ڈی پی او نوشہرہ نے ڈائریکٹر ایف ائی اے خیبرپختونخوا کو تحریری درخواست گورینگ لیٹر کے ساتھ بھجوادی جس پر ڈائریکٹر ایف ائی اے نے کاروائی کرتے ہوئے مذکورہ کیس سائبر کرائم سیل کے حوالے کردیا۔ جنھوں نے ابتدائی طور پر پریس کلب کے صدر مشتاق پراچہ سے بیان قلمبند کروایا؛ اوراس حوالے سے تمام تفصیلات اور شواہد ایس ایچ ایف ائی اے سائبر کرائم سیل کے حوالے کردی گئی۔ دوسری طرف شاعر رحیم خان باچا خان گل ثمر شاہ اور آواز حق کے خلاف ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نوشہرہ عبدالجبار خان کی عدالت میں ڈیفامیشن اور ڈیمجز سوٹ کا مقدمہ داخل کردیا۔ جس کی سماعت بارہ جنوری کوہوگی۔ فریقین کونوٹس جاری کر دیے گئے۔جبکہ اس ضمن میں اے این پی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین اور ضلعی صدر ملک جمعہ خان ملک افتاب خان اور ضلعی جنرل سیکرٹری خوشحال خان پر مشتمل جرگہ نوشہرہ پریس کلب ایا۔ اور پریس کلب کے صدر مشتاق پراچہ سے رحیم خان کیساتھ راضی نامے کی بات کی جس پر مشتاق پراچہ نے راضی نامہ کرنے سے انکار کردیا۔ اور ان سے دریافت کیا کہ اے این پی کے ضلعی ، صوبائی اور مرکزی قیادت اور مرکزی سالار کونوشہرہ پریس کلب کی جنرل باڈی کی جانب سے رحیم خان کے خلاف جو تحریری درخواست دی ا س پر کیا عمل درآمد ہوا۔ اے این پی رحیم خان کوکوئی لاجسٹک سپورٹ فراہم نہیں کرے گئی۔ اے این پی کی قیادت اس پر عمل درامد کو یقینی بنائیں تاکہ نوشہر ہ پریس کلب اور اے این پی کے مابین اختلافات پید انہ ہوں اور اسی بات پر فیصلہ اور دعاخیر کی گئی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -