بھارتی دباﺅ مسترد، سری لنکا پاکستانی جنگی طیارے جے ایف 17 تھنڈر خریدے گا،سری لنکن صدر کا دورہ پاکستان کا اعلان

بھارتی دباﺅ مسترد، سری لنکا پاکستانی جنگی طیارے جے ایف 17 تھنڈر خریدے گا،سری ...
بھارتی دباﺅ مسترد، سری لنکا پاکستانی جنگی طیارے جے ایف 17 تھنڈر خریدے گا،سری لنکن صدر کا دورہ پاکستان کا اعلان

  

کولمبو (ویب ڈیسک )سری لنکا نے بھارتی دباﺅ مسترد کرتے ہوئے پاکستانی جنگی طیارے جے ایف 17تھنڈر خریدنے کا فیصلہ کیا ہے۔پاکستان اورسری لنکا نے انسداد دہشت گردی ، دفاعی پیداوار ، تجارت اور سائنس و ٹیکنالوجی سمیت 8 شعبوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا ہے۔ دوطرفہ تجارت حجم کو ایک ارب ڈالر تک بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ پاکستان اور سری لنکا کا عالمی اور علاقائی امور پر موقف یکساں ہے اور دونوں ممالک باہمی تعاون کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔ہمارے لوگ سری لنکا میں شوگر ملیں لگانا چاہتے ہیں، وزیراعظم نوازشریف نےسری لنکن صدر کو پاکستان کے دورے کی دعوت دیدی جو انہوں نےقبول کرلی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نوازشریف نے وفود کے ہمراہ سری لنکن صدر میتھری پالا سری سینا سے صدارتی محل میں ملاقات کی۔ صدارتی محل آمد پر ان کا پرتپا ک استقبا ل کیا گیا، ان کے اعزاز میں روایتی رقصکیا گیا، گارڈ آف آنر پیش کیا گیا جبکہ انہیں توپوں کی سلامتی بھی دی گئی۔،وفود کی سطح پر ہونیوالی ملاقات میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ دونوں ممالک انسداد دہشت گردی کیلئے ملکر کام کریں گے اور کیونکہ دونوں ممالک کا عالمی و علائی امور پر موقف یکساں ہے ، دونو ں ممالک کے درمیان دفاعی پیداوار، تعلیم ، صحت ، تجارت ، سائنس و ٹیکنالوجی، ثقافت ،جیولری سمیت آٹھ شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو مزید بڑھانے پر اتفاق کیا گیا۔ ملاقات کے دوران خطے کی مجموعی صورت حال اور باہمی دلچسپی کے امور پر بھی بات چیت کی گئی۔ملاقات کے بعد وزیراعظم نواز شریف نے اپنے مختصر خطاب میں کہا کہ ملاقات انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوئی ،دونوں ملکوں کے تعلقات باہمی احترام پر مبنی ہیں ،پاکستان اور سری لنکا باہمی تعاون کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان 8 معاہدوں پر دستخط ہوئے ہیں ،دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تعلقات بڑھانے کے مواقع موجود ہیں اورباہمی تجارت ایک ارب ڈالر تک بڑھانے کا ہدف پورا کریں گے،سائنس ،ٹیکنالوجی ،زراعت کے شعبوں میں بھی تعاون کو فروغ دیں گے۔وزیراعظم نوازشریف نے کہاکہ عالمی اور علاقائی امور پر دونوں ملکوں کا موقف یکساں ہے اور دونوں ممالک دہشت گردی کیخلاف جنگ لڑ رہے ہیں اور پاکستان انسداد دہشت گردی کے لئے سری لنکا کے ساتھ تعاون کرنے کیلئے تیار ہے ، دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے کے اقدام پر مل کر کام کریں گے،انہوں نے کہاکہ پاک بحریہ کی مشقوں میں سری لنکا کی شرکت کرنا خوش آئند بات ہے ،دونوں ممالک مشترکہ مشقوں کے انعقاد پر تعاون کریں گے۔

وزیراعظم نے سری لنکن صدر کی جانب سے مہمان نوازی اور شاندار استقبال پر حکومت سری لنکا اور عوام کا شکریہ ادا کیا۔ وزیراعظم نوازشریف نے سری لنکن صدر میتھری پالا سری سینا کو پاکستان کے دورے کی دعوت بھی دی جو انہوں نے قبول کرلی۔ سری لنکا کے صدر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان دوستانہ تعلقات موجودہیں جو وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ مزید گہرے ہورہے ہیں ، دونوں ممالک سائنس و ٹیکنالوجی ، دفاعی پیداوار ، تجارت سمیت مختلف شعبوں میں ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ اٹھائیں گے اور ہم پاکستان کے ساتھ تعلقات کو مزید فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔ سری لنکن صدر نے وزیراعظم نوازشریف کا سری لنکن میں 20 سالہ دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پاکستان کی طرف سے فراہم کیے گئے تعاون پر شکریہ ادا کیا ، انہوں نے کہاکہ ہم اپنے ڈی پیز کی بحالی کیلئے پاکستان کی مدد چاہتے ہیں ، سری لنکا کے صدر نے کہا کہ نادرا بائیو میٹرک سسٹم سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے اس ضمن میں پاکستان سے باقاعدہ درخوا ست کی ہے جس پر پاکستان نے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ وزیراعظم نوازشریف کے ہمراہ وفاقی وزیر دفاعی پیداواررانا تنویر ، وزیر تجارت خرم دستگیر ، مشیر خارجہ طارق فاطمی اور دیگر وفاقی سیکرٹری بھی موجود تھے۔ قبل ازیں وزیراعظم نواز شریف کا سری لنکا کے صدارتی محل پہنچنے پر سری لنکن صدر میتھری پالاسری سینا اور دیگر اعلیٰ حکام نے پرتپاک استقبال کیا وزیراعظم کے ہمراہ ان کی اہلیہ خاتون اول بیگم کلثوم نواز بھی تھیں ، وزیراعظم نوازشریف کو روایتی انداز میں صدارتی محل تک لایا گیا اور اس د وران سری لنکا کا روایتی رقص کیا گیا۔

مزید :

بین الاقوامی -