نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ نے اپنی تکمیل کا ایک اور اہم سنگِ میل عبور کر لیا

نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ نے اپنی تکمیل کا ایک اور اہم سنگِ میل عبور کر ...

لاہور (کامرس رپورٹر)969میگاواٹ پیداواری صلاحیت کے نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ نے ایک اور اہم سنگِ میل عبور کرلیا ہے ، پراجیکٹ کے ساڑھے51کلو میٹر طویل سرنگوں پر مشتمل واٹر وے سسٹم میں پانی کی بھرائی شروع کر دی گئی ہے ۔ واٹر وے سسٹم میں پانی کی بھرائی نہایت اہم عمل ہے اس لئے اِسے بتدریج مکمل کیا جائے گا ۔ پہلے مرحلے میں پانی کی بھرائی زیریں جانب واقع سرنگ (ٹیل ریس ٹنل )سے شروع کی گئی ہے ۔ٹیل ریس ٹنل میں پانی کی بھرائی کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر بریگیڈیئر (ر) محمد زرین نے کہا کہ یہ پراجیکٹ نہایت تیزی کے ساتھ اپنی تکمیل کی جانب بڑھ رہا ہے ۔ منصوبے کی تکمیل کے لئے متعدد اہم اہداف کامیابی کے ساتھ مکمل کئے جاچکے ہیں جن میں ڈیم اور پاور ہاس کی تعمیر اور واٹر وے سسٹم کی تعمیر ، پاور ہاس اور سوئچ یارڈ میں ٹربائنوں ،جنریٹرز اور ٹرانسفارمرز سمیت دیگر تمام الیکٹرو مکینیکل آلات کی تنصیب اور اِن آلات کی ڈرائی ٹیسٹنگ شامل ہیں ۔ ڈیم کے ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کا عمل ضرورت کے مطابق مکمل کیا جارہا ہے ۔

منصوبہ مجموعی طور پر 97 فی صد مکمل ہو چکا ہے ۔درایں اثنا اپنے ایک بیان میں چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین نے واٹر وے سسٹم میں پانی کی بھرائی کے آغاز کا اہم ہدف حاصل کرنے پر نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی انتظامیہ ،کنسلٹنٹس اور کنٹریکٹرز کو مبارکباد دی ہے ۔یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ واپڈا کے کم لاگت بجلی پیدا کرنے کے ترجیحی منصوبے کا حصہ ہے۔ آزاد کشمیر میں دریائے نیلم پر تعمیر کئے جارہے اِس منصوبے کی مجموعی پیداواری صلاحیت 969میگاواٹ ہے ۔ اِس منصوبے کے چار پیداواری یونٹ ہیں اور ہر یونٹ کے بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت242.25میگاواٹ ہے ۔ منصوبے کے پہلے یونٹ سے اِسی سال مارچ میں بجلی کی پیداوار شروع ہو جائے گی جبکہ باقی تین یونٹ ایک ایک ماہ کے وقفہ سے مرحلہ وار مکمل ہو جائیں گے ۔ منصوبہ اپنی تکمیل پر قومی نظام کو ہر سال تقریبا پانچ ارب یونٹ ماحول دوست بجلی مہیا کرے گا۔ اِس منصوبے سے سالانہ فوائد کا تخمینہ 50 ارب روپے ہے ۔

مزید : کامرس