ماربل اور گرینائٹ کے شعبہ میں تحقیق اور ترقی کیلئے معاہدہ

ماربل اور گرینائٹ کے شعبہ میں تحقیق اور ترقی کیلئے معاہدہ

اسلام آباد (آن لائن)ماربل اور گرینائٹ کے شعبہ میں تحقیق و ترقی کوفروغ دینے اور ماربل کی کان کنی میں استعمال ہونے والی مشینری کی مقامی سطح پر تیاری کیلئے پاکستان سٹون ڈویلپمنٹ کمپنی (پاسڈیک) اور یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پشاور کے درمیان ایک معاہدے پر دستخط ہوئے۔ جس کے ذریعے یونیورسٹی کے محققین کوماربل اور گرینائٹ کے شعبہ میں انجینئرنگ اور ٹیکنالوجی کے نئے رجحانات اور مختلف خیالات کیلئے مددگار فضا مہیا ہو گی۔ معاہدہ پر سی ای او پاسڈیک زاہد مقصود شیخ اوریونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پشاور کے وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹر افتخار حسین نے دستخط کئے۔ معاہدے کے مطابق یونیورسٹی پاسڈیک کے منصوبوں میں حصہ لیتے ہوئے ماربل اور گرینائٹ کے شعبہ میں روایتی اور فرسودہ طریقہ کار میں بہتری لانے کیلئے تحقیق و ترقی کا عمل بروئے کار لائے گی۔

جس کے ذریعے صنعت میں رائج موجودہ طریقہ کار کوبدلنے میں مدد ملے گی۔ اس موقع پر سی ای او پاسڈیک زاہد مقصود شیخ نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ معاہدے کے تحت دونوں ادارے تحقیق اور ترقی کے شعبہ میں باہمی تعاون کو وسعت دیتے ہوئے ماربل اور گرینائٹ کے فرسودہ طریقوں میں بہتری لاکر کان کنی کو ترقی دے سکیں گے۔ علاوہ ازیں کان کنی میں استعمال ہونے والی جدید مشینری کی مقامی سطح پر تیاری کی جانب بھرپور توجہ دی جائیگی۔ تاکہ ارزاں قیمت پر جدید مشینیں مقامی طور پر تیار ہوسکیں۔ انہوں نے مذید کہا کہ پاسڈیک ماربل اور گرینائٹ کے شعبہ کے معیار کو بلند کرنے کے لئے پہلے ہی مشینی کوائریز کے قیام کے ذریعے ماربل اور گرینائٹ نکالنے کیلئے جدید کان کنی متعارف کرا چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاسڈیک پرائیویٹ سیکٹر کو جدید مشینیں مہیا کرنے کے ساتھ ساتھ ان کی مصنوعات کی نمائش کے لئے بین الاقوامی اہمیت کی حامل نمائشوں ایکسپو پاکستان اور بلڈ ایشیا میں ان کی شرکت کا اہتمام کررہا ہے ۔

نیلم جہلم ہائیڈرو ساڑھے 51کلو میٹر طویل سرنگوں پر مشتمل واٹر وے سسٹم میں پانی کی بھرائی شروع

پاور پراجیکٹ

مزید : کامرس